تحصیل درگئی کی تاریخ میں پہلی بار خواتین کیلئے کھلی کچہری کا انعقاد

  تحصیل درگئی کی تاریخ میں پہلی بار خواتین کیلئے کھلی کچہری کا انعقاد

  

سخاکوٹ(نمائندہ پاکستان)تحصیل درگئی کی تاریخ میں پہلی بار خواتین کیلئے کھلی کچہری کا انعقاد۔خواتین نے مسائل کے انبار لگا دئیں۔جائیداد میں وراثت کا حصہ نہ ملنے،بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام میں غریب خواتین کو نظر انداز کرنے، گرلز سکولوں میں بنیادی سہولیات کے عدم فراہمی سمیت ہسپتالوں میں خواتین کیلئے ادویات فوری فراہمی کا مطالبہ کیا گیا۔اس سلسلے میں تحصیل کونسل جرگہ ہال درگئی میں ڈپٹی کمشنر ملاکنڈ ریحان گل خٹک کے زیر صدارت خواتین کیلئے کھلی کچہری کا انعقاد کیا گیا۔جس میں اسسٹنٹ کمشنر درگئی محب اللہ خان، ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر درگئی وحید اللہ خان، ا ے سی (یوٹی)سہیل خان، کامران خان اور مختلف محکموں کے سربراہان جن میں ڈی ایچ او ڈاکٹر وحیدگل، ایم ایس تحصیل ہیڈکواٹرہسپتال درگئی ڈاکٹر عنایت صافی، ایس ڈی او محکمہ تعلیم زنانہ نصرت، محکمہ جنگلات کے مرتضی خان، تحصیل مونسپل آفیسر اورنگزیب خان، ایم پی اے پیر مصور خان کے پرسنل سیکرٹری فضل حمید نے بھی شرکت کی۔ کھلی کچہری کے دوران مختلف یونین کونسلوں کے خواتین نے اپنے اپنے علاقے میں خواتین کے درپیش مسائل پیش کئیں۔گورنمنٹ گرلزپرائمری سکول نمبر1سخاکوٹ کی بلڈنگ مسمار کرنے اور اسکی اسرنوتعمیر کا مطالبہ کیا گیا کیونکہ سکول ہذا میں طالبات کی تعداد زیادہ ہے اور اس میں کمرو ں کی کمی ہیں جس کی وجہ طالبات مشکلات سے دوچار ہیں۔گرلز پرائمری سکول معیار سخاکوٹ میں نکاس اب کا مسئلہ فوری طور حل کیا جائے کیونکہ سکول ہذا میں پانی کھڑا ہونے کی وجہ سے طالبات کو مشکلات کا سامنا ہے اور ساتھ سکول ہذا میں کمروں کی کمی ہے لہذا اس میں نئے کمرے تعمیر کی جائیں گر لز پرائمری سکول نمبر2سخاکوٹ کی بلڈنگ خستہ حال ہوچکی ہے جس سے کسی بھی وقت ناخوشگوار واقعہ رونما ہوسکتا اس کو مسمار کر کے اسرنوتعمیر کیا جائے۔گورنمنٹ گرلز پرائمری سکول ہریانکوٹ کی چاردیواری گر گئی ہے اس کے چاردیواری کو فوری بندوبست کیا جائے کیونکہ اس باپردہ استانیوں اور طالبات کو سخت مشکلات کا سامنا ہیں۔ تحصیل بھر میں جگہ جگہ کمیونٹی سکولز موجود ہیں مگر اس کو وہ سہولیات نہیں دی جاتی جو سرکاری سکولوں کو دی جاتی ہیں۔سخاکوٹ میاں اعظم شاہ بابا میں واقف شدہ میلہ کے جگہ پر لوگوں نے مکانات تعمیر کئے ہیں انتظامیہ ان کے خلاف ایکشن لیکر اس جگہ پر جنازگاہ تعمیر کیاجائے۔سخاکوٹ شامیلات میں زمین کی خرید وفروخت لوگوں اور مالکان کے باہمی رضامندی سے ہوئی ہیں مگر بعض لوگ اب اس میں روڑے اٹکا رہے ہیں جو مناسب نہیں کیونکہ اب اس میں بہت سے آبادیاں ہوئی ہیں اور اس کو بنیادی سہولیات بھی فراہم کی گئے ہیں۔ڈپٹی کمشنر ملاکنڈ ریحان گل خٹک نے بعض مسائل پر موقع پر ہی احکامات جاری کئے اور بعض مسائل متعلقہ محکموں کے سربراہوں کو فوری طور پر حل کرنے کی ہدایت کی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -