خیبر،طور خم بارڈر پر مزدوروں کا مطالبات کے حل کیلئے مظاہرہ

خیبر،طور خم بارڈر پر مزدوروں کا مطالبات کے حل کیلئے مظاہرہ

  

خیبر(بیورورپورٹ) طورخم بارڈر پر مزدوروں کااپنے مطالبات کے حق میں احتجاجی مظاہرہ۔سرحد پرمزدوروں کیلئے آسانیاں پیدا کرنا ناگزیر ہے۔حکومت رزق حلال کمانے کے لئے مزدوروں کوروزگار کے مواقع فراہم کرے تاکہ غریب مزدور فاقہ کشی سے بچ سکیں۔مزدور یونین کے صدر فرمان علی شینواری پاک افغان طورخم بارڈر پر مزدور یونین کے صدر حاجی فرمان شینواری کی قیادت میں درجنوں مزدوروں نے طورخم بارڈر پر ان کو درپیش مشکلات اور سختی کے حوالے سے احتجاجی مظاہرہ ہوا احتجاجی مظاہرے میں نوجوانان قبائل کے صدر اسرار شینواری اور دیگرعہدیداروں نے بھی شرکت کئے اس موقع پر طورخم مزدور یونین کے صدر فرمان شینواری نے کہا کہ طورخم بارڈر پر کام کرنے اور رزق حلال کمانے والے مزدوروں کو بے جا تنگ نہ کیاجائے اور ان کو روزگار کے مواقع فراہم کریں اور مزدوروں کے ساتھ تجارتی سامان لانے میں نرمی کی جائے انہوں نے کہا کہ گزشتہ کئی مہینوں سے طورخم بارڈر کی بندش کے باعث ہزاروں مزدور بے روزگار ہو گئے تھے چونکہ اب حکومت نے طورخم بارڈر کو ہفتہ میں 4دن کے لئے پیدل آمدورفت کے لئے دونوں اطراف سے کھول دیا گیا ہیں جس کے باعث علاقے کے سینکڑوں  محنت کش مزدوری کرتے ہیں اس لئے  طورخم بارڈر پر تعینات ایف سی،کسٹم این ایل سی، پولیس اور دیگر زمہ دار حکام مزدوروں کے ساتھ خصوصی رعایت کریں اور ان کو بے جا تنگ نہ کیا جائے تاکہ خسرے سے نکل سکے اور اپنے بچوں کیلئے کچھ کما سکے انہوں نے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا کہ پاک افغان طورخم بارڈر پر مزدوروں کو آسانیاں پیدا کرنے کیلئے پالیسی میں نرمی لائی جائے تاکہ بے روزگاری سے بچ سکے انہوں نے مزید کہا کہ لنڈی کوتل کے عوام کا روزگار طورخم سرحد سے وابستہ ہے گزشتہ سات مہینے سے ہزاروں لوگ بے روزگار ہوگئے ہیں اب ان پر توڑا رحم کرکے روزگار کے مواقع دیں تاکہ ان کی مشکلات میں کمی 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -