کروڑوں کا غبن: 4 ملزموں کا جسمانی ریمانڈ منظور کرنے کا حکم 

کروڑوں کا غبن: 4 ملزموں کا جسمانی ریمانڈ منظور کرنے کا حکم 

  

 ملتان (خصو صی رپورٹر) جوڈیشل مجسٹریٹ ملتان نے جنوبی پنجاب میں بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے نام پر کروڑوں روپے غبن کرنے کے مقدمہ میں ملوث بینک عملے سمیت  4 ملزمان کا جسمانی ریمانڈ منظور کرنے کا حکم دیا ہے۔ قبل ازیں فاضل عدالت میں پولیس (بقیہ نمبر12صفحہ 6پر)

تھانہ ایف آئی اے کے مطابق حکومت کی جانب سے نجی بینک کو بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کی رقم منتقل کی جاتی ہے۔نجی بینک کی جانب سے علاقائی سطح پر ریٹیلرز رقوم  فہرست میں شامل افراد کو تقسیم کرتے ہیں۔ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ ملتان نے جنوبی پنجاب کے 32 ریٹیلرز اور نجی بینک کے عملے سے تحقیقات شروع کیں۔جبکہ رحیم یار خان چھاپہ مار کر ریٹیلر اور بینک عملے سمیت 4 افراد گرفتار ہوئے ریٹیلر ماجد اصغر،فرنچائز مالک وقار،بینک منیجر عمر تصدق اور ریٹیلر حارث نذیر شامل ہیں۔بی آئی ایس پی کے ڈائریکٹر کی جانب سے صادق آباد میں ریٹیلر عمران کی خود کشی کے بعد ایف آئی اے کو شکایات کی گئی تھی۔صادق آباد میں ریٹیلر عمران نے 20 لاکھ غبن ہونے پر خودکشی کرلی تھی۔ تاہم عدالت نے ملزمان کا جسمانی ریمانڈ منظور کرلیا ہے۔

منظور

مزید :

ملتان صفحہ آخر -