وفاق کی صوبے کے معاملات میں مداخلت ثابت ہوئی تو وزیراعظم کو نوٹس جاری کرینگے ،چیف جسٹس قاسم خان کے نارروال روڈ کی عدم تعمیر کیخلاف کیس میں ریمارکس

وفاق کی صوبے کے معاملات میں مداخلت ثابت ہوئی تو وزیراعظم کو نوٹس جاری کرینگے ...
وفاق کی صوبے کے معاملات میں مداخلت ثابت ہوئی تو وزیراعظم کو نوٹس جاری کرینگے ،چیف جسٹس قاسم خان کے نارروال روڈ کی عدم تعمیر کیخلاف کیس میں ریمارکس

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)نارووال روڈ کی عدم تعمیر کیخلاف درخواست پر چیف جسٹس قاسم خان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ وفاق کی صوبے کے معاملات میں مداخلت ثابت ہوئی تو وزیراعظم کو نوٹس جاری کرینگے ،جہاں دل کرتا ہے وہاں وفاقی حکومت مداخلت کردیتی ہے، جہاں دل نہیں کرتا وہاں معاملہ صوبائی حکومت کے کھاتے میں دال دیاجاتا ہے،چیف جسٹس ہائیکورٹ نے کہاکہ جیسے جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے وزیراعظم کونوٹس دیا ہم بھی نوٹس دے دیتے ہیں ۔

نجی ٹی وی جی این این کے مطابق نارووال روڈ کی عدم تعمیر کیخلاف درخواست پر ہائیکورٹ میں سماعت ہوئی،عدالت نے کہاکہ لاہور نارووال روڈ کی تعمیر کی ذمہ داری صوبائی حکومت کی ہے یا وفاقی حکومت کی؟،وفاقی حکومت صوبے کے معاملات میں کیسے مداخلت کرسکتی ہے؟۔

چیف جسٹس قاسم خان نے کہاکہ وفاق کی صوبے کے معاملات میں مداخلت ثابت ہوئی تو وزیراعظم کو نوٹس جاری کرینگے ،جہاں دل کرتا ہے وہاں وفاقی حکومت مداخلت کردیتی ہے، جہاں دل نہیں کرتا وہاں معاملہ صوبائی حکومت کے کھاتے میں دال دیاجاتا ہے۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ساری دنیا سے سکھوں نے آنا ہے سارے سکھوں نے لاہور آنا وہاں سے کرتارپور جانا تھا،لاہور سے کرتار پور جائیں تو روڈ کی اچھی حالت نہیں اگرصوبے کے کاموں میں مداخلت ہو رہی ہے تو پھر یہ آئین کی خلاف ورزی ہے، چیف جسٹس ہائیکورٹ نے کہاکہ جیسے جسٹس قاضی فائزعیسیٰ نے وزیراعظم کونوٹس دیا ہم بھی نوٹس دے دیتے ہیں ،اربوں روپے وزیراعظم اور وزیراعلیٰ اپنے اضلاع پر خرچ کررہے ہیں ، یہ روڈ قومی مفاد میں ہے اس پر خرچ نہیں ہو رہے ، اتنی باتیں آپ کو 3 ماہ سے سمجھ نہیں آرہی تھیں آج میں نے مجبوراً کھل کرباتیں کیں،لاہورہائیکورٹ نے وفاقی حکومت سے روڈ کی تعمیر کے فنڈز سے متعلق رپورٹ طلب کرلی ۔

مزید :

قومی -علاقائی -پنجاب -لاہور -