سرکاری نرخ پر آٹا کہاں پر مل رہاہے کسی کو پتہ نہیں، وزیر ایک پودا لگاتا ہے تو اخباروں میں بڑے بڑے اشتہار لگ جاتے ہیں ، پشاور ہائیکورٹ

سرکاری نرخ پر آٹا کہاں پر مل رہاہے کسی کو پتہ نہیں، وزیر ایک پودا لگاتا ہے تو ...
سرکاری نرخ پر آٹا کہاں پر مل رہاہے کسی کو پتہ نہیں، وزیر ایک پودا لگاتا ہے تو اخباروں میں بڑے بڑے اشتہار لگ جاتے ہیں ، پشاور ہائیکورٹ

  

پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن)آٹے کی قیمت میں اضافہ سے متعلق کیس میں جسٹس قیصر رشید نے کہاکہ سرکاری نرخ پر آٹا کہاں پر مل رہا ہے کسی کو پتہ نہیں، وزیر ایک پودا لگاتا ہے تو اخباروں میں بڑے بڑے اشتہار لگ جاتے ہیں ، آٹا کہاں دستیاب ہے،مقامی اخبارات میں اشتہاردیں تاکہ لوگوں کو پتہ چلے ۔

نجی ٹی وی جی این این کے مطابق پشاور ہائیکورٹ میں آٹے کی قیمت میں اضافے سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی،سیکرٹری خوراک، ڈپٹی کمشنر پشاور اور دیگر سرکاری افسر عدالت میں پیش ہوئے۔

جسٹس قیصر رشید نے کہاکہ غریب عوام کو دو وقت کی روٹی میسر نہیں ، وزراءسب اچھا ہے کی رپورٹ دے رہے ہیں،مارکیٹ میں آٹا75، ٹماٹر 200 روپے فی کلو مل رہے ہیں،مہنگائی کی وجہ سے لوگوں کے چولہے ٹھنڈے پڑ گئے ہیں ، سیکرٹریز و دیگر افسر دفتروں میں بیٹھ کر مراعات انجوائے کررہے ہیں ،اپنے دفتروں سے باہر نکلیں عوام کی کوئی فکر کریں۔

ڈ ی سی نے کہاکہ پوائنٹس بنائے ہیں،روزانہ 1600 بیگ آٹا سستے ریٹ پر دے رہے ہیں،جسٹس قیصر رشید نے کہاکہ سرکاری نرخ پر آٹا کہاں پر مل رہاہے کسی کو پتہ نہیں، وزیر ایک پودا لگاتا ہے تو اخباروں میں بڑے بڑے اشتہار لگ جاتے ہیں ، اخبار میں یہ اشتہار نہیں دیتے کہ کہاں پر سستا آٹا مل رہا ہے ، انتظامیہ سے لوگوں کے توقعات ہوتی ہیں ،افسر اپنی ذمہ داری نہیں نبھا سکتے تو عوام کیاکریں ۔

عدالت نے کہاکہ آٹا کہاں دستیاب ہے،مقامی اخبارات میں اشتہاردیں تاکہ لوگوں کو پتہ چلے ،پشاور ہائیکورٹ نے آئندہ سماعت پر پیشرفت رپورٹ طلب کرلی ،عدالت نے کہاکہ ایسی مثبت رپورٹ ہو جس میں قیمتیں کم کی ہوں ،رپورٹ پیش نہیں کی تووزیراعلیٰ اور صوبائی وزیر خوراک کو طلب کریں گے ۔

مزید :

قومی -علاقائی -خیبرپختون خواہ -پشاور -