مقبوضہ کشمیرکی دو بڑی سیاسی جماعتوں نے ایسا اعلان کردیا کہ مودی سرکار کے ہوش اڑ جائیں گے

مقبوضہ کشمیرکی دو بڑی سیاسی جماعتوں نے ایسا اعلان کردیا کہ مودی سرکار کے ہوش ...
مقبوضہ کشمیرکی دو بڑی سیاسی جماعتوں نے ایسا اعلان کردیا کہ مودی سرکار کے ہوش اڑ جائیں گے

  

سرینگر(ڈیلی پاکستان آن لائن)مقبوضہ کشمیر کی دو بڑی  سیاسی جماعتوں نیشنل کانفرنس اور پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی کے درمیان سیاسی اتحاد قائم ہو گیا ہے،دونوں پارٹیوں نے مقبوضہ کشمیر کی آئینی حیثیت بحال کرانے کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔ 

نجی ٹی وی چینل "ہم نیوز" کے مطابق عالمی خبر رساں ایجنسی نے رپورٹ شائع کی ہے کہ سابق کٹھ پتلی وزیراعلیٰ مقبوضہ کشمیر فاروق عبداللہ اور محبوبہ مفتی کے درمیان سیاسی اتحاد قائم ہو گیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق فاروق عبداللہ نے کہا ہے کہ نیشنل کانفرنس اور پیپلزپارٹی ڈیموکریٹک پارٹی کے درمیان سیاسی اتحاد قائم ہوا جس کا مقصد مل کر جموں و کشمیرکی اُس آئینی حیثیت کو بحال کرنا ہے جو گذشتہ سال  5اگست 2019سے قبل تھی۔ قائم کیے جانے والےسیاسی اتحاد کو ’اتحاد برائے گپکار ڈیکلیئریشن‘ قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ ہم اس بات کا مطالبہ کررہے ہیں کہ بھارتی سرکار ریاست کے عوام کو وہی حقوق واپس کرے جو پانچ اگست 2019 سے قبل انہیں حاصل تھے۔

خیال رہے کہ بھارت نے گزشتہ سال مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کو ختم کر کے مقبوضہ وادی میں کرفیو لگا کرتمام سیاسی و حریت رہنماؤں کو پابند سلاسل کردیا تھا۔ سابق وزیراعلیٰ مقبوضہ جموں و کشمیر محبوبہ مفتی کو پانچ اگست 2019 کے اقدام کے بعد گزشتہ روز رہا کیا گیا ہے۔

مزید :

علاقائی -آزاد کشمیر -مظفرآباد -