آج عالمی دن،خاندان کے 12نابیناافراد نظرکرم کے منتظر

آج عالمی دن،خاندان کے 12نابیناافراد نظرکرم کے منتظر

  

کوٹ ادو(تحصیل رپورٹر)پا کستان سمیت  دنیا بھر میں نابینا افراد کا عالمی دن آج منایا جائے گا۔دوسری جانب سرکاری ونجی ادارے روایتی تقریبات کرنے تک(بقیہ نمبر23صفحہ6پر)

 محدودہیں۔ایک خاندان کے 12نابیناافرادحکام کی نظرکرم کے منتظرہیں۔دری29ہزار کے رہائشی ایک ہی خاندان کی 3 خواتین سمیت 12 افراد پیدائشی طور پر بینائی سے محروم ہیں،کسی ادارے  نے آج تک ان کی مشکلات دور نہ کیں۔کوٹ ادوکے علاقہ موضع پرہاڑغربی غیرمستقل دری 29ہزار دریائے سندھ کنارے آبادلاشاری برادری کے پیربخش لشاری کے4 بیٹے اللہ بخش، غلام یاسین،غلام اکبر، قاری عبدالحمید جبکہ غلام اکبر کے چار بچے فوزیہ بی بی، محمد ساجد، محمد صابر، مجیب الرحمن اور ان کی ہمشیرہ رقیہ بی بی کے بھی 2 بچے نابینا ہیں جن میں نادیہ بی بی، زین العابدین،محمد ادریس کابیٹا الطاف حسین اور غلام حسین کی ایک بیٹی نسرین بی بی  پیدائشی طور پر نابینا ہیں،ان نابینا افراد جن کی عمر 4 سال سے 60 سال تک کی ہیں اکثریت حفاظ اور قاری ہیں، اس حوالے سے 60 سالہ نابینا اللہ بخش نے بتایا کہ حکومت کی طرف سے پہلے انہیں خدمت کارڈ جاری کیے گئے تھے جو کہ بند کر دیئے گئے ہیں۔ آج تک معذوری والے شناختی کارڈ بھی نہ بن سکے،اس حوالے سے محمد ساجد کا کہنا تھا کہ سرکاری ونجی اداروں سمیت انسانی حقوق کی کئی تنظیمیں اس خاص دن پر باتیں کرنے تک محدود ہو تی ہیں۔غلام اکبر نے کہا کہ حکومت نے نابینا افراد کے لیے سرکاری ملازمتیں میں کوٹہ مختص تو کردیا گیا جو کہ آٹے میں نمک کے برابر ہے تا ہم اس کوٹے پر بھی عمل نہیں کیا جاتا۔انہوں نے حکام سے نوٹس لینے کی اپیل کی ہے۔

نابیناافراد

مزید :

ملتان صفحہ آخر -