نامورفنکارحافظ سجادغربت اوربیماری سے جنگ لڑتے چل بسے

نامورفنکارحافظ سجادغربت اوربیماری سے جنگ لڑتے چل بسے

  

 ملتان (سپیشل رپورٹر)حکومت کی جانب سے علاج کیلئے مالی معاونت کی آس لگائے ملتان سٹیج‘ ٹی وی اور فلم کا بڑا فنکار حافظ سجاد غربت کے عالم میں بیماری سے جنگ لڑتے ہوئے زندگی کی بازی ہارگیا۔ گزشتہ روز اچانک ان کا بلڈ پریشر لو ہوگیا جس کی وجہ سے ان کی طبیعت بگڑ گئی اور وہ طبی امداد سے قبل وفات پاگئے۔ ان کی عمر 70سال تھی۔ انہوں نے پسماندگان میں ایک بیوہ اور ایک بیٹا چھوڑا ہے۔ ان کی نمازِجنازہ(بقیہ نمبر36صفحہ6پر)

 جلال باقری جنازہ گاہ میں رات 8بجے ادا کی گئی جس میں ان کے عزیز واقارب اور شوبز حلقوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔ واضح رہے کہ حافظ سجاد حسین کا فنی کیریئر 40سال پر محیط ہے۔انہوں نے سرائیکی‘ پنجابی اور اُردو زبان میں بہترین انداز اور رُوپ دھار کر کامیڈی کرتے ہوئے شائقین اور خصوصاً بچوں کو محظوظ کیا جبکہ انگریز کے کردار میں انہیں بہت شہرت حاصل ہوئی۔ انہوں نے سینکڑوں سٹیج اور درجنوں پی ٹی وی اور نجی چینلز کے ڈراموں میں اپنے فن کا لوہا منوایا اور اپنی پرفارمنس کی بدولت درجنوں بار کیش ایوارڈ‘ درجنوں میڈلز اور تعریفی اسناد حاصل کیں۔ ایک دہائی قبل انہوں نے ایک نجی ٹی وی چینل پر عمر شریف کے کامیڈی پروگرام میں بہترین پرفارمنس کا مظاہرہ کرکے داد حاصل کی۔ 4سال سٹارلٹ تھیٹر کے ڈرامہ میں کام کرتے ہوئے انہیں فالج کا اٹیک ہوا‘ تب سے انہوں نے ڈراموں کو خیرباد کہا اور گھر زیرعلاج رہے جبکہ کورونا   میں وفاقی حکومت کی طرف سے فنکاروں کی مالی معاونت کیلئے اعلان ہوا تو انہوں نے اپنے بہتر علاج کیلئے اپنے کوائف وفاقی حکومت کو بھجوائے لیکن  انہیں حکومت کی طرف سے کسی بھی قسم کی مالی سپورٹ نہ دی گئی جس کا انہیں شدید رنج تھا۔انکی وفات پر ملتان‘ لاہور اور کراچی کے فنکاروں نے اظہارِتعزیت کیا۔ مرحوم کے ایصالِ ثواب کیلئے قرآن خوانی اتوار صبح 8بجے ان کی رہائشگاہ کے قریب واقع جامع مسجد میں ادا کی جائے گی۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -