کٹیگری ڈی ہسپتال یار حسین میں ڈاکٹروں اور عملہ کی ہڑتال

  کٹیگری ڈی ہسپتال یار حسین میں ڈاکٹروں اور عملہ کی ہڑتال

  

صوابی(بیورورپورٹ)کٹیگری ڈی ہسپتال یار حسین ضلع صوابی کے ڈاکٹروں اور سٹاف نے آئے روز لوگوں کی جانب سے تکرار اور لڑائی جھگڑوں کے خلاف بطور احتجاج ہسپتال میں ہڑتال کر دیا۔اس دوران او پی ڈی بند ہونے سے مریضوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ہڑتالی ڈاکٹروں اور دیگر سٹاف کا موقف تھا کہ ہسپتال ہذا میں ایک چوکیدار تعینات ہے اور وہ بھی سیکیورٹی کے لئے اسلحہ کے بغیر خدمات انجام دے رہے ہیں اسی طرح آئے روز مریضوں کے ساتھ آنے والے لوگ ہسپتال میں موجود سٹاف کے ساتھ زبردستی اور جلدی کام کر وانے کے لئے بد تمیزی اور تکرار کر تے ہیں اور جنگ جھگڑے تک نوبت جا پہنچتی ہے اور لوگ ڈاکٹروں اور سٹا ف کو دھمکیاں دے رہے ہیں انہوں نے کہا کہ اگر چہ ہسپتال میں طبی سہولیات کی کمی ہے لیکن اس کا نزلہ ہم پر گرایا جاتا ہے احتجاجی ڈاکٹروں نے مختلف نعروں پر مشتمل پلے کارڈ اُٹھا رکھے تھے جس پر ہمیں تحفظ اور سکون دو کے نعرے درج تھے اے سی لاہور نے موقع پر پہنچ کر ڈاکٹروں کے مطالبات متعلقہ حکام کو پہنچانے کی یقین دہانی کرائی لیکن ڈاکٹروں نے موقف اختیار کیا کہ جب تک ان کے مطالبا ت تسلیم نہیں کئے جاتے تب تک ہڑتال جاری رہے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -