سرحد چیمبر کا ٹیکس دہند گان کے اکاؤنٹس منجمد کرنے پر ایف بی آر کے اختیار کی بحالی پر تحفظات

  سرحد چیمبر کا ٹیکس دہند گان کے اکاؤنٹس منجمد کرنے پر ایف بی آر کے اختیار کی ...

  

          پشاور (سٹی رپورٹر) سرحد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے قائمقام صدر عمران خان نے ٹیکس دہندگان کے بنک اکاؤنٹس منجمدکرنے کے لئے فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر)کے فیلڈ فارمیشنز کے اختیارات کی بحالی پر تحفظات کا اظہار کیاہے اور وزیراعظم پاکستان عمران خان اور وفاقی وزیر برائے خزانہ شوکت ترین سے پرزور مطالبہ کیا ہے کہ بزنس مخا لف پالیسیوں سے ا جتناب کیا جا ئے تاکہ  کاروبارمیں آسانیاں پیدا کرنے کے حوالے سے کوششیں بے سود ثابت نہ ہوں۔ایف بی آر کے مذکورہ اختیارات کی بحالی سے بدعنوانی کی نئی راہ کھلے گی۔ ایک بیان میں سرحد چیمبر کے قائمقام صدر عمران خان نے کہا کہ فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے ملک بھر کے فیلڈ فارمیشنز کو ٹیکس دہندگان سے ٹیکس واجبات کی ریکوری کے لئے معمول کے مطابق بینک اکاؤنٹس منجمد کرنے کے اختیارات بحال کردیئے ہیں جس کے تحت ٹیکس دہندگان کے بینک اکاؤنٹس منجمدکرنے سے 24 گھنٹے قبل متعلقہ ٹیکس دہندہ ادارے یا کمپنی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ٗ پرنسپل آفیسر سے پیشگی منظوری لینے کی شرط بھی واپس لے لی گئی ہے۔ سرحد چیمبر کے قائمقام صدر عمران خان نے کہاکہ ملک میں کاروبار کیلئے مشکل سے سازگار فضاء قائم ہوئی ہے جو کہ ایف بی آر کے ایسے اقدام سے دوبارہ بے اعتمادی میں تبدیل کی جا رہی ہے۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اس فیصلہ کو فوری طورپر واپس لیا جائے کیونکہ ایسے فیصلوں کا نفاذ کاروباری طبقہ کے کسی صورت بہتر مفاد میں نہیں ہے۔ انہوں نے اس بات پر بھی زور دیا ہے کہ کاروبار میں آسانیاں پیدا کرنے کے اقدامات اور کوششوں پر کاری ضرب لگانے سے ایف بی آر اور دیگر متعلقہ اداروں کو روکا جائے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -