انسداد بدعنوانی کی حکمت عملی کامیاب رہی،چیئرمین نیب 

    انسداد بدعنوانی کی حکمت عملی کامیاب رہی،چیئرمین نیب 

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) چیئرمین نیب جسٹس (ر)جاوید اقبال نے کہا ہے کہ نیب کی انسداد بدعنوانی کی حکمت عملی کامیاب رہی ہے۔جس کے باعث نیب نے بدعنوان عناصر سے539 ارب روپے ریکور کئے ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے نیب ہیڈکوارٹر میں نیب کی مجموعی کارکردگی سے متعلق جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔اجلاس کے دوران  بتایا گیاکہ نیب کو اپنے قیام سے اب تک 5 لاکھ ایک ہزار 723 شکایات وصول ہوئی ہیں ان میں سے 4 لاکھ 91 ہزار 358 شکایات نمٹا دی گئی ہیں۔ نیب نے 16 ہزار 188 شکایات کی جانچ پڑتال کی منظوری دی، 15 ہزار 391 شکایات کی تصدیق کا عمل مکمل کیا گیا۔ نیب نے 10 ہزار297 انکوائریوں کی منظوری دی جن میں سے 9 ہزار260 انکوائریاں مکمل کی گئیں۔ نیب نے 4 ہزار693انویسٹی گیشنز کی منظوری دی جس میں سے 4 ہزار353  مکمل کی گئیں۔ نیب نے اس عرصہ کے دوران بالواسطہ اور بلاواسطہ طور پر819.645  ارب روپے بالواسطہ اور بلاواسطہ طور پر وصول کرکے قومی خزانہ میں جمع کرائے ہیں جو کہ ریکارڈ کامیابی ہے۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ نیب نے مختلف احتساب عدالتوں میں 3 ہزار760 بدعنوانی کے ریفرنس دائر کئے ہیں جن میں سے2482 ریفرنسز کے فیصلے احتساب عدالتوں نے سنائے ہیں، اس وقت مختلف احتساب عدالتوں میں 1278 ریفرنسز زیر سماعت ہیں جن کی مالیت 1335.019 ارب روپے بنتی ہے۔ چیئرمین نیب جسٹس جاوید اقبال نے کہا کہ نیب سارک ممالک کیلئے رول ماڈل کی حیثیت رکھتا ہے، نیب کو سارک اینٹی کرپشن فورم کا چیئرمین منتخب کیا گیا، نیب بدعنوانی کے خلاف اقوام متحدہ کے کنونشن کے تحت پاکستان کا فوکل ادارہ ہے

 چیئرمین نیب 

مزید :

صفحہ اول -