بھارت نے کشمیر چھین لیا، ہم کہاں کھڑے ہیں؟ ملک جادو ٹونے سے نہیں چلے گا: فضل الرحمان

بھارت نے کشمیر چھین لیا، ہم کہاں کھڑے ہیں؟ ملک جادو ٹونے سے نہیں چلے گا: فضل ...

  

         پشاور(سٹاف رپورٹر) اپوزیشن جماعتوں کے سیاسی اتحاد پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ عالمی قوتوں کی کوشش ہے کہ پاکستان سے اسلامی آئین کو ختم کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ خواتین اور بچوں کے حقوق ہم سے زیادہ کوئی نہیں جانتا ہے لیکن یہ ہمیں حقوق پڑھاتے ہیں۔وزیراعظم پھر سے جاہلانہ انداز اختیار کئے ہوئے ہیں، امیر جمعیت العلمائے اسلام (ف) مولانا فضل الرحمان نے مفتی محمود کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ ہمارے حکمران جادو ٹونے سے ملک چلا رہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ مضبوط معیشت کے بغیر اپنا مقام نہیں بنا سکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ملک کوسیکولر بنانے کا خواب کبھی پورا نہیں ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ آج بھارت نیکشمیر ہم سے چھین لیا تو ہم کہاں کھڑے ہیں؟ ان کا کہنا تھا کہ فاٹا کے انضمام کو بھارت نے دلیل بنا کر کشمیر ہم سے چھین لیا۔مولانا فضل الرحمان نے کڑی نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ ان کوپتہ ہی نہیں ہے کہ اقوام متحدہ میں کشمیر پرپاکستان کا مؤقف کیا ہے؟ انہوں نے کہا کہ آج پاکستان کی معیشت زمین بوس ہو چکی ہے اور مہنگائی و بیروزگاری میں روز بروز اضافہ ہو رہا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ نوکریوں کو جھانسہ دے کر نوجوانوں کے ساتھ دھوکہ کیا گیا ہے۔پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ آج غریب آدمی بازار سے بچوں کے لیے راشن لینے کے قابل نہیں رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ 74سالوں میں ملازمین کی تعداد ایک کروڑتک نہیں پہنچی لیکن یہ ایک کروڑنوکریوں کا جھانسہ دے رہے ہیں۔راشد محمود سومرو نے کہا کہ آج خلاف مخلوق اور جنات والے آمنے سامنے ہیں،ہم ان کٹ پتلے حکومت کا جنازہ ڈی چوک اسلام آباد میں پڑھے گئے،موجودہ حکومت نے ملک کا بیڑہ غرق کیا،خواتین اور بچیوں کی عزت محفوظ نہیں،ریاست مدینہ میں کلمہ پڑھنے پر پابندی کے بل بنائے جارہے ہیں،داڑھی والوں نے کابل میں سپر پاوں کو شکست دی،یہ داڑھی والے کٹ پتلے حکومت کا خاتمہ کرکے دم لینگے۔ اکرم خان درانی نے کہا کہ مفتی محمود نے ملک کو ایسا آئین دیا جس میں اسلام کے دفعات شامل ہیں،مفتی محمود نے قادیانیوں کو اسمبلی میں قانون سازی میں غیر مسلم ثابت کیا تھا،کوشش ہورہی ہے کہ پاکستان سے اسلام کا نام ختم کرکے سیکولر بنایا جائے،عمران خان نے معیشت کے ساتھ ملک کی ثقافت کو بھی نقصان پہنچایا،صوبے کے وزیر اعلی کا نابینا افراد کے ساتھ مزاکرات کا وقت نہیں،پی ٹی آئی نے اسپتالوں کا ایسا حال بنایا جہاں نہ ڈینگی اور نہ کورونا کا علاج ہورہا ہے،کورونا کے مد میں جو وسائل خرچ ہوئے ہیں وہ قوم کے سامنے رکھا جائے،بیلین ٹری اور بی آر ٹی  منصوبے میں  اربوں روپے کی کرپشن ہوئی ہے،تجاوزات کے نام سے غریب لوگوں کے دوکانوں اور گھروں کو مسمار کردیا گیا ہے،مفتی محمود نے کہا کہ مسلم لیگ ن کے صوبائی ترجمان اختیار ولی نے کہا کہ پاکستان کے عوام جس تبدیلی کو تین سالوں سے برداشت کررہی ہے وہ کے پی لوگ گزشتہ 9 سال سے برداشت کررہے ہیں،اختیار ولی نے کہا کہ جو خاتم النبین کو نہہ بول سکتے وہ ریاست مدینہ کی بات کررہے ہیں،ایک کروڑ نوکروں کے وعدے کرنے والوں نے ڈھائی کروڑ لوگوں کو بے روزگار کردیا،پی ڈی ایم ملک میں شاف شفاف انتخابات کرانا چاہتی ہے،آفتاب شیرپاؤ نے کہا کہ مفتی محمود نے ہمیشہ اصولوں کی سیاست کی،موجودہ حکومت دھاندلی کی پیداوار ہے،آئین اور جمہوریت کے بقا کیلئے کسی قسم کی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے،موجودہ حکومت کی مہنگائی سے ہر کوئی بے زار ہیں،عمران خان بیرون ممالک کے میڈیا کو انٹریوں دیتے وقت پشتوں کو دہشت گردکا تاثر دیتا ہے،پشتون دہشت نہیں, پرامن مسلمان ہیں۔پٹرول، آٹا،دال اور چینی کی قیمتیں کسی بھی حکومت میں اتنی نہیں بڑھی،موجودہ حکومت نے چار بار وزیر خزانہ تبدیل کی گئیں۔ محمود خان اچکزئی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ علامہ اقبال نے اپنے اشعار میں مسلمانوں کو اتحاد کا درس دیا ہے،عالمی طاقتوں نے تیل کے ذخائر حاصل کرنے کیلئے عرب کے مسلمانوں کے تقسیم کیا،پشتونوں کے علاوہ دنیا بھر کے مسلمان دوسروں کے قبضے میں رہے۔دنیا کے تمام مذاہب اور لوگوں نے افغانستان کے لوگوں کو پر امن اور مہمان نواز گردانا ہے،

فضل الرحمان

مزید :

صفحہ اول -