کنونشن سنٹر کی نجکاری میں سب سے بڑی رکاوٹ سی ڈی اے حکام ہیں: میاں محمد سومرو

کنونشن سنٹر کی نجکاری میں سب سے بڑی رکاوٹ سی ڈی اے حکام ہیں: میاں محمد سومرو

  

         اسلام آباد (آئی این پی)سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے نجکاری کو بریفنگ دیتے ہوئے وفاقی وزیر نجکاری میاں محمد سومرو نے انکشاف کیا ہے کہ کنونشن سنٹر کی نجکاری میں سب سے بڑی رکاوٹ سی ڈی اے حکام ہیں،وزارت کے اجلاس میں سی ڈی اے حکام کو مدعو کیاگیا تھا جہاں پر کنونشن سنٹر کی فروخت کے بارے میں تفصیلی غور و خوض کیا گیا، سی ڈی اے حکام نے کوئی اعتراض نہیں کیا،کابینہ کی منظوری کے بعد کنونشن سنٹر کی فروخت کیلئے 12پارٹیوں نے بولیاں جمع کرائیں،شارٹ لسٹنگ سے پہلے ہی سی ڈی اے بورڈ نے اعتراض اٹھا دیا، جس پر معاملات کو وہیں پر روکنا پڑا، کمیٹی نے اگلے اجلاس میں سی ڈی اے حکام کو طلب کرلیا۔جمعرات کو سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے نجکاری کا اجلاس چیئرمین کمیٹی سینیٹر شمیم آفریدی کی زیر صدارت پارلیمنٹ ہاؤس میں منعقد ہوا۔اجلاس میں وزیر نجکاری میاں محمد سومروکے علاوہ وزارت کے اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔ اجلاس کو بریفنگ دیتے ہوئے  وفاقی وزیر نجکاری میاں محمد سومرو نے کہا کہ کرونا وباء، آئی پی پیز مذاکرات اور لینڈ ایشوز، ایل این جی پاور پلانٹس کی نجکاری میں بڑی رکاوٹ ہیں،متعدد ایشوز کے باعث پاور پلانٹس کی نجکاری میں دلچسپی لینے والی کمپنیوں نے وزٹ نہیں کیا،23کمپنیوں میں سے 12کمپنیوں نے پلانٹس کی خریداری میں دلچسپی ظاہر کی لیکن وزٹ نہیں کیا۔وزیر نجکاری میاں محمد سومرونے بتایا کہ کمیٹی کی جانب سے تجاویز بجھوائی گئیں تھیں،کمیٹی کی تجاویز کابینہ میں ہیں جو بھی فیصلہ ہوگا آگاہ کیاجائے گا،ہوٹل کی بڈز لینے والے تو فوری طور پر ادائیگی کیلئے تیار تھے،لیکن معاملہ مختلف جگہوں پر آ کر اٹک گیا جس کی وجہ سے تاخیر ہوئی،سروسز ہوٹل کی مد میں بیانیہ کی مد میں رقم لے چکے ہیں۔اجلاس میں این پی پی ایم سی ایل نے نجکاری پر کمیٹی کو بریفنگ دی۔نجکاری کمیشن نے کہا کہ ستمبر 2019کو این پی پی ایم سی سٹرکچر کی فروخت کا فیصلہ ہوا،مئی 2020میں  نیپرا ٹیرف کی منظوری دی گئی،ستمبر 2020میں حکومت نے آئی پی پیز سے مذاکرات شروع کر دئیے،پاور پلانٹ کی ساری انویسٹمنٹ حکومت کی تھی،پاور پلانٹ کا 70فیصد ڈیٹ کا معاملہ باقی ہے،این پی پی ایم سی ایل کا معاملہ اب کابینہ کمیٹی برائے توانائی میں ہے،این پی پی ایم سی ایل پلانٹ آر ایل این جی پر ہے۔رکن کمیٹی سینٹر محسن عزیزنے کہا کہ کیا پلانٹ فل کیپسٹی پر چل رہا ہے سوال یہ ہے؟حکام نے بتایا کہ پلانٹ کی 60سے 61فیصد تک کیپسٹی ہے۔سینٹر محسن عزیزنے کہا کہ جنوری میں اس پر کام شروع ہوا تو ابھی تک مکمل نہیں ہوا۔وزیر نجکاری میاں محمد سومرونے کہا کہ مارچ میں کووڈ آیا اس کے بعد معاملہ تاخیر میں چلا گیا۔جناح کنونشن سنٹر کی نجکاری کے معاملہ پر اجلاس میں سی ڈی اے نے کنونشن سنٹر کی جگہ کم کئے جانے کا انکشاف کیا۔

وزیر نجکاری

مزید :

صفحہ آخر -