بچوں کا خون چوس کر قتل کرنے والا "خونخوار ویمپائر" ہجوم کے ہاتھوں مارا گیا

بچوں کا خون چوس کر قتل کرنے والا "خونخوار ویمپائر" ہجوم کے ہاتھوں مارا گیا
بچوں کا خون چوس کر قتل کرنے والا

  

نیروبی (ڈیلی پاکستان آن لائن)  افریقی ملک کینیا میں بچوں کا خون چوسنے کے بعد انہیں قتل کرنے والا سیریل کلر "خونخوار ویمپائر" ہجوم کے ہاتھوں مارا گیا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق  20 سالہ میسٹین ملیمو وانجالا کو 14 جولائی کو دو بچوں کی گمشدگی پر گرفتار کیا گیا تھا جب اس سے تفتیش کی گئی تو اس نے انکشاف کیا کہ وہ گزشتہ پانچ سال میں کم از کم 10 دیگر افراد کو قتل کرچکا ہے، بعض اوقات ان کو مارنے سے پہلے وہ ان کی رگوں سے خون چوس لیتا تھا۔ اسے عدالت میں پیش کیا جانا تھا تاہم وہ وہاں سے فرار ہو کر 400 کلومیٹر دور اپنے گھر میں پہنچ گیا۔

کینیا کے حکام کا کہنا ہے کہ خونخوار ویمپائر کے نام سے مشہور ملزم اپنے گھر میں موجود تھا کہ تبھی سکول جانے والے بچوں نے اسے دیکھ کر پہچان لیا اور شور مچادیا جس پر گاؤں کے لوگ اکٹھے ہوگئے۔ ہجوم سے بچنے کیلئے ملزم بھاگ کر پڑوسی کے گھر میں داخل ہوگیا تاہم ہجوم نے اسے وہاں سے گھسیٹ کر باہر نکالا اور پیٹ پیٹ کر قتل کردیا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -جرم و انصاف -