بچی سے درندگی نے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے سرجھکا دیے :امجد ملک

بچی سے درندگی نے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے سرجھکا دیے :امجد ملک
بچی سے درندگی نے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے سرجھکا دیے :امجد ملک

  

لندن (بیور ورپورٹ) لاہور مین کمسن نچی سے درندگی پر بیرون ملک مقیم پاکستانی بھی شدید مضطرب ہوئے ہیں اور انہوں نے اس سانھہ کے ملزموں کو کیفر،کردار تک پہنچانے کا مطالبہ کیا ہے ۔ اے پی ایل برطانیہ اور راچڈل لا ءسوسائٹی کے صدر بیرسٹر امجد ملک نے پانچ سالہ بچی جنسی بداخلاقی پر غم وغصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس واقعہ سے عرش و فرش کانپ گئے ہیں جبکہ پوری دنیا میں تارکین وطن کا سر شرم سے جھک گیا ہے، یہ مسلمانوں کا شیوہ نہیں بلکہ درندوں سے نیچے بھی کوئی سطح ہو تو اس سے بھی گر کر ی حرکت کی گئی ہے۔ انہو ں نے کہ مطالبہ کیا کہ اس کیس کی انتہائی غیر جانبداری اور ایمانداری کیساتھ تفتیش کر کے ملزمان کو انصاف کے کٹہرے میں کھڑا کر قرار واقعی سزا دی جائے انہوں نے کہا کہ اب سوسائٹی کی طرف سے یہ مطالبہ زور پکڑ گیا ہے کہ کریمنل جسٹس سسٹم اس انداز سے تبدیل کیا جائے کہ لوگ قانون کا تحفظ محسوس کریں ۔انہوں نے کہا کہ اس کیس کا جلد از جلد فیصلہ معاشرے میں پائی جانیوالی بے چینی کو ختم کر سکتا ہے۔ بیرسٹر امجد ملک نے اس المناک واقعہ پر کہا کہ غیر ملکی میڈیا اور غیر مسلم معاشرے نے اپنے رنگ اور ڈھنگ میں تبصرے کیے ہیں جس سے ہمارے سر شرم سے جھک گئے ہیں اس مسلم معاشرے میں اس طرح کی حرکات اور فعل قابل مذمت اور خدا وند کریم کے غیض و غضب کو دعوت دینے کے مترادف ہیں۔ علاوہ ازیں بیرسٹر امجد ملک نے افغان سرحد پر پاکستان کے جنرل اور دیگر اعلی فوجی افسران کی شہادت پر انتہائی غم وغصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس دہشت گردی کی جنگ نے پاکستان کو جو نقصان پہنچایا ہے اسکا ازالہ کئی صدیوں تک پورا نہیں کیا جا سکتا۔

مزید :

بین الاقوامی -