نوجوان بھارتی لڑکی رات کے 1 بجے سوکر اٹھی تو 11 ماہ کی بچی غائب تھی، رات سوتے میں کون چھین کر لے گیا اور پھر کہاں سے اور کس حالت میں ملی؟ ایسا دردناک انکشاف کہ جان کر آپ کا بھی دل خون کے آنسو روئے گا

نوجوان بھارتی لڑکی رات کے 1 بجے سوکر اٹھی تو 11 ماہ کی بچی غائب تھی، رات سوتے ...
نوجوان بھارتی لڑکی رات کے 1 بجے سوکر اٹھی تو 11 ماہ کی بچی غائب تھی، رات سوتے میں کون چھین کر لے گیا اور پھر کہاں سے اور کس حالت میں ملی؟ ایسا دردناک انکشاف کہ جان کر آپ کا بھی دل خون کے آنسو روئے گا

  


نئی دلی (نیوز ڈیسک) بھارت سے خواتین کی عصمت دری کی خبریں آنا کوئی نئی بات نہیں ہے لیکن دارالحکومت دلی کے نواحی علاقے ویکاس پوری سے ایک ایسی بھیانک خبر سامنے آئی ہے کہ جسے سن کر واقعی انسان پر لرزہ طاری ہوجاتا ہے۔

میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق ایک زیر تعمیر عمارت پر کام کرنے والے مزدوروں نے سڑک کنارے خیمے لگارکھے تھے جہاں ایک 25 سالہ خاتون اپنی ننھی بیٹی کے ساتھ سورہی تھی۔ رات تقریباً ایک بجے جب اس کی آنکھ کھلی تو اپنی 11ماہ کی بچی کو غائب پاکر خاتون چیخنے چلانے لگی۔ میل آن لائن سے بات کرتے ہوئے بدقسمت ماں نے بتایا کہ جیسے ہی اس نے دیکھا کہ اس کی ننھی بیٹی غائب تھی تو اس پر جیسے وحشت طاری ہوگئی اور وہ پوری طاقت سے چیخیں مارنے لگی، جس پر ارد گرد کے خیموں میں سوئے ہوئے سب لوگ اٹھ کر آگئے۔ ننھی بچی کی تلاش فوری طور پر شروع کردی گئی جبکہ پولیس کو بھی خبر کردی گئی۔ آدھے گھنٹے بعد پولیس بھی پہنچ گئی اور لوگوں کے ساتھ مل کر بچی کی تلاش شروع کردی گئی۔

نومولود بچی کے گم ہونے پر ہنگامہ، بالآخر گھر والوں نے ائیر کنڈیشنر کھولا تو ایسا منظر کہ دیکھ کر پیروں تلے زمین نکل گئی، کیا معاملہ تھا؟ جان کر کسی بھی انسان کے ہوش اُڑجائیں

تقریباً اڑھائی گھنٹے بعد قریبی جنگل میں جھاڑیوں کے اندر ننھی بچی خون میں لت پت پڑی مل گئی۔ اس کا لباس پھٹا ہوا تھا اور پورے جسم پر زخموں کے نشانات تھے۔ بچی کو تشویشناک حالت میں دین دیال ہسپتال پہنچایا گیا جہاں اس کے زخموں کی نوعیت کو دیکھتے ہوئے اسے گائنی سیکشن میں لیجایا گیا۔ بچی کا علاج کرنے والے ڈاکٹروں نے لرزہ خیز انکشاف کیا کہ اس کے ساتھ زیادتی کی گئی تھی اور اس کے ننھے جسم کو بری طرح نوچا گیا تھا۔

اگرچہ یہ بات ناقابل تصور ہے کہ 11 ماہ کی بچی کے ساتھ بھی کوئی سفاک شخص ایسا سلوک کرسکتا ہے لیکن پولیس نے جب شکوک و شبہات کی بنا پر 42 سالہ شخص وجے سنگھ کو گرفتار کیا تو اس نے اعتراف کرلیا کہ وہ بچی کو اس کی سوئی ہوئی والدہ کے پہلو سے اٹھا کر جھاڑیوں میں لے گیا تھا۔ درندہ صفت ملزم نے پولیس کو یہ بھی بتایا کہ وہ دو گھنٹے تک بچی کو اپنی ہوس کا نشانہ بناتا رہا اور پھر اسے خون میں لت پت وہیں پھینک کر فرار ہوگیا کیونکہ اس کا خیال تھا کہ وہ مر چکی تھی۔

دلی پولیس کے ڈپٹی کمشنر پشپندرا کمار کا کہنا تھا کہ ملزم کے خلاف مضبوط شواہد دستیاب ہوچکے ہیں اور اسے قرار واقعی سزا دلوانے کے لئے قانونی کارروائی جاری ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...