’پیوٹن کے پاس 9/11 حملوں کی خفیہ تصاویر موجود ہیں جو منٹوں میں امریکی ڈرامے کا پول پوری دنیا کے سامنے کھول سکتی ہیں‘ ایسی خبر منظر عام پر کہ امریکی حکومت کی راتوں کی نیندیں اُڑگئیں

’پیوٹن کے پاس 9/11 حملوں کی خفیہ تصاویر موجود ہیں جو منٹوں میں امریکی ڈرامے کا ...
’پیوٹن کے پاس 9/11 حملوں کی خفیہ تصاویر موجود ہیں جو منٹوں میں امریکی ڈرامے کا پول پوری دنیا کے سامنے کھول سکتی ہیں‘ ایسی خبر منظر عام پر کہ امریکی حکومت کی راتوں کی نیندیں اُڑگئیں

  


ماسکو (نیوز ڈیسک) نائن الیون کا واقعہ تاریخ کی سب سے بڑی دہشت گردی کہلاتا ہے، اور یہ خبر گردش کررہی ہے کہ روسی صدر ولادی میر پیوٹن اس بڑی دہشت گردی کے بارے میں ایک ایسے راز سے پردہ اٹھانے والے ہیں کہ جسے تاریخ کا سب سے بڑا انکشاف قرار دیا جائے گا، کیونکہ اس کے نتیجے میں امریکا کی مکاری ساری دنیا کے سامنے عیاں ہو جائے گی۔

اخبار ڈیلی سٹار کی ایک رپورٹ کے مطابق انتہائی بااثر ذرائع کا کہنا ہے کہ روسی صدر سیٹ لائٹ سے لی گئی کچھ ایسی تصاویر اور دیگر شواہد حاصل کرچکے ہیں کہ جن کی روشنی میں یہ بات مکمل طور پر واضح ہوگئی ہے کہ 9/11 کی خوفناک دہشت گردی کسی اور نے نہیں بلکہ خود امریکہ نے کی۔ رپورٹ کے مطابق روسی صدر کا یہ انکشاف اس قدر تہلکہ خیز ہوگا کہ امریکہ میں تو گویا بھونچال آجائے گا اور اس بات کا قوی امکان ہے کہ ملک میں اس قدر ہنگامہ برپا ہو گا کہ حکومت کا ہی خاتمہ ہوجائے گا۔

’اس معاملے میں تم ٹانگ نہ اڑاﺅ ورنہ۔۔۔‘ چین نے امریکہ کو واضح وارننگ دے دی

یہ نظریات بہت پہلے ہی سامنے آچکے تھے کہ القاعدہ اور اسامہ بن لادن محض سامنے نظر آنے والے کردار ہیں جبکہ دہشت گردی کے اصل ذمہ دار اس وقت کے صدر جارج بش اور ان کی انتظامیہ ہے، جنہوں نے کنٹرولڈ دھماکوں کے ذریعے ورلڈ ٹریڈ سنٹر کو تباہ کیا۔ اب پہلی بار یہ کہا جارہا ہے کہ اس نظریے کی حمایت میں طاقتور ترین ثبوت ولادی میر پیوٹن کے ہاتھ لگ چکے ہیں ، جو کسی بھی وقت دنیا کے سامنے آنے والے ہیں۔ روسی سیاسی ویب سائٹ PRAVDAکا کہنا ہے کہ صدر ولادی میر پیوٹن یہ تہلکہ خیز انکشافات کرنے ہی والے ہیں، جس کے بعد یہ بات کسی بھی شک سے بالاتر ثابت ہوجائے گی کہ اس بھیانک دہشتگردی میں وائٹ ہاﺅس براہ راست ملوث تھا۔

مزید : بین الاقوامی


loading...