معروف تجزیہ کار اور صحافی ارشد شریف حکومت پر برس پڑے ،ایک سالہ دور میں ایسے کیڑے نکال دیئے کہ وزیر اعظم عمران خان کو بھی یقین نہیں آئےگا

معروف تجزیہ کار اور صحافی ارشد شریف حکومت پر برس پڑے ،ایک سالہ دور میں ایسے ...
معروف تجزیہ کار اور صحافی ارشد شریف حکومت پر برس پڑے ،ایک سالہ دور میں ایسے کیڑے نکال دیئے کہ وزیر اعظم عمران خان کو بھی یقین نہیں آئےگا

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سینئر صحافی اور تجزیہ کار ارشد شریف نے کہا ہے کہ تحریک انصاف کی حکومت ایک سال  بعد بھی کچھ نہیں کر سکی اور اب بھی مشورے لیے جا رہے ہیں،حکومت کی معاشی پالیسی بھی کچھ نہیں ہے،نیب کو حکومتی عہدیداروں کے خلاف کوئی بھی کارروائی کرنے سے روکا جا رہا ہے،پی ٹی آئی حکومت اپنے کیےدعوؤں کے خلاف کام کرتے ہوئےدوستوں کو اربوں روپے کے ٹھیکے دے رہی ہے۔

نجی ٹی وی چینل’’ہم نیوز‘‘ کےپروگرام میں حکومت کی ایک سالہ کارکردگی پرکڑی تنقید کرتے ہوئےسینئرصحافی ارشد شریف کا کہنا تھا کہ پاکستان تحریک انصاف نے صحافیوں سے 100 روز مانگے تھے کہ ہم پر تنقید نہ کرنا ہم سب درست کر لیں گے لیکن کچھ نہیں ہوا ،پھر تین مہینہ مانگ لیے اور اس میں بھی کچھ نہیں ہوا، بات 6 ماہ تک چلی گئی اور صحافیوں کی جانب سے کوئی سوال نہیں کیے گئے،عمران خان نے حکومت میں آنے سے قبل بتا دیا تھا کہ ہم کیا کیا کام کریں گے جسے دیکھ کر لوگوں نے سمجھ لیا کہ واقعی تبدیلی آ جائے گی ، حکومت اپنے ہی کیے گئے دعوؤں کے خلاف کام کر رہی ہے اور اپنے ہی دوستوں کو اربوں روپے کے ٹھیکے دیے جا رہے ہیں، 21 ٹاسک فورس بنا دی گئیں لیکن نتیجہ کچھ بھی نہیں نکل رہا۔انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی نے اپنے دور حکومت میں اتنا بڑا ہاتھ نہیں مارا تھا جتنا بڑا ہاتھ موجودہ حکومت 416 ارب روپے معاف کر کے مارنے جا رہی تھی،کاروباری افراد کا حکومت پر اب کوئی بھروسہ ہی نہیں ہے کیونکہ یہ تو بار باریوٹرن لے لیتے ہیں،وزرا اپنےدائرہ اختیار سے نکل کردوسرے اداروں میں ہاتھ ماررہے ہوتے  ہیں،یہ کسی کو نظر نہیں آ رہا،علی زیدی سے اپنی وزارت سنبھالی نہیں جا رہی اور وہ کبھی ایل این جی میں گھسے ہوئے ہیں اور کبھی کراچی کا کچرا اٹھا رہے ہیں،موجودہ دور حکومت کی جمہوریت میں وزیر اعظم اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سے ہاتھ ہی نہیں ملاتے۔انہوں نے کہا کہ  نیب کو حکومتی عہدیداروں کے خلاف کوئی بھی کارروائی کرنے سے روکا جا رہا ہے،وزیر اعظم کے خصوصی مشیر ذلفی بخاری کے خلاف منی لانڈرنگ کی سوا سال قبل تحقیقات شروع ہوئی تھیں اسے ختم کرنے کے لیے نیب پر دباؤ ڈالا جا رہا ہے کہ کیس بند کیا جائے، مالم جبہ اراضی سکینڈل میں حکومتی رہنما پرویز خٹک سمیت دیگر کے ریفرنس میں نیب کی جانب سے کلین چٹ ملنے جا رہی ہے اور اس معاملے کو دبا دیا جائے گا۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد


loading...