عاطف رئیس بڑے بھائیوں کی طرح ، ان کو بی آرٹی ٹھیکہ ایشائی ترقیاتی بینک نے دیا، علی زیدی کا ٹھیکہ دینے کے الزام پر جواب

عاطف رئیس بڑے بھائیوں کی طرح ، ان کو بی آرٹی ٹھیکہ ایشائی ترقیاتی بینک نے ...
عاطف رئیس بڑے بھائیوں کی طرح ، ان کو بی آرٹی ٹھیکہ ایشائی ترقیاتی بینک نے دیا، علی زیدی کا ٹھیکہ دینے کے الزام پر جواب

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی وزیر علی زیدی نے کہاہے کہ عاطف رئیس ملک کی کمپنی کوٹھیکہ ایشائی ترقیاتی بینک نے دیا ،عاطف رئیس میرے بڑے بھائی کی طرح ہیں، ہمار ے تین نسلوں سے تعلقات ہیں،بی آر ٹی ٹھیکے کے حوالے سے جس کو تحقیقات کرنی ہے اور جس ادارے سے تحقیقات کرانی ہےکرالے،اب میں بھی کہتا ہوں کہ اس حوالے سے شفاف تحقیقات ہونی چاہئیں۔

جیونیوز کے پروگرام ”نیا پاکستان “میںدوست کی کمپنی کو بی آر ٹی پشاور کا ٹھیکا دلانے کے الزام پر وفاقی وزیر علی زیدی نے موقف دیتے ہوئے کہا کہ مجھ پر الزام لگایا جارہاہے کہ میں نے اپنی دوست کی کمپنی کو پشاور میٹرو کاٹھیکہ دلوایا ہے، ٹھیکہ عاطف رئیس کی کمپنی کو ایشیائی ترقیاتی بینک نے دیاہے اور یہ ٹھیکہ ٹینڈر کے ذریعے ہوا تھا اور وہاں کئی دوسری کمپنیوں نے بھی اپلائی کیا ہواتھا،عاطف رئیس ملک میرے دوست ہی نہیں بلکہ بڑ ے بھائی کی طرح ہیں اور ہمارے تین نسلوں سے تعلقات ہیں،اب میں وزیر بن کر اپنے تعلقات کوختم تو نہیں کرسکتا ۔

علی زیدی کا کہنا تھا کہ  عاطف رئیس ملک اس ملک کے ایماندار ترین اور آٹھ دس بڑے ٹیکس دہندگان میں شامل ہیں،ان کی کمپنی مشرف دور سے کام کررہی ہے،ان کوٹھیکے پیپلز پارٹی اور ن لیگ کے دور حکومت میں بھی ملے تھے،میں عاطف رئیس کا نام بتا کر چین لے کر گیا تھا تاکہ وہ ایڈوائس کرسکیں،عاطف رئیس کی کمپنی سال 2000سے پہلے سے کام کر رہی ہے اور اس کمپنی کو مشرف اور زرداری دور میں بھی ٹھیکے ملتے رہے۔انہوں نے کہا کہ لوگوں سے میرا تعلق اعتمادکی بنیاد پر ہے  لیکن میرا سگا بھائی بھی کوئی  غیر قانونی کام کرےتو  اسے بھی جیل بھجوادوں گا۔ایک سوال کے جواب میں وفاقی وزیر علی زیدی کا کہنا تھا کہنیب نے عمران الحق کو جیل میں ڈال کر غلط کیا،نیب عمران الحق سے متعلق تحقیقات کرتی اور نام ای سی ایل میں ڈال دیتی ۔

واضح رہے کہ گذشتہ روز  معروف تحقیقاتی صحافی رؤف کلاسرہ نےوفاقی وزیر علی زیدی پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا تھا کہ علی زیدی اپنے جس ذاتی دوست عاطف رئیس کے گھر میں رہتے ہیں اس پر ایف آئی اے میں مقدمے درج ہیں،علی زیدی اسی دوست کو  وزیر اعظم کے دورہ چین میں ساتھ لے کر گئے تھےاور اس دورے سے واپسی پر عاطف رئیس کو 84 ملین ڈالر میں پشاور میٹرو کا ٹھیکہ مل گیا تھا ،کیا وفاقی وزیر علی زیدی نے وزیراعظم کو بتایا تھا وہ جس ذاتی دوست عاطف کو ان کے ساتھ چین لے کر جارہے ہیں اس پرایف آئی   اےنے سکینڈل میں مقدمہ درج کررکھا ہے؟ کیا عاطف نے پشاور میٹرو کا 84 ملین ڈالرز کنڑیکٹ لیتے وقت متلعقہ اتھارٹی کو بتایا تھا ان پر پہلے سےایف آئی اے میں فراڈ کا مقدمہ چل رہا تھا؟۔رؤف کلاسرہ کا وزیر اعظم عمران خان کو مخاطب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ وفاقی وزیر علی زیدی کا ایک اور دوست علی جیمل جو کچھ عرصہ قبل ایف بی آر کے 2ارب ٹریکر سکینڈل کا مرکزی کردار تھا،آج کل پتہ ہے وہ کہاں ہے اور کیا کررہا ہے؟ یقینا آپ کو پتہ نہیں ہوگا ،علی زیدی نے اسے پورٹ قاسم اتھارٹی بورڈ کا ممبر لگایا ہے،بورڈ کی سرپرستی میں پانچ ایل این جی  ٹرمینل لگوا رہے ہیں ۔

مزید : قومی


loading...