تنہا ہی کیوں نہ ہوجائیں ، کشمیریوں کاساتھ دیں گے ، وزیرخارجہ

تنہا ہی کیوں نہ ہوجائیں ، کشمیریوں کاساتھ دیں گے ، وزیرخارجہ
تنہا ہی کیوں نہ ہوجائیں ، کشمیریوں کاساتھ دیں گے ، وزیرخارجہ

  


ملتان (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاہے کہ ماضی میں لوگ مصلحتوں کا شکار تھے ، ہم نے فیصلہ کیا خواہ تنہا ہی کیوں نہ ہوجائیں ، کشمیریوں کا ساتھ دیں گے ۔ بھارت سے کہتے کہ کشمیریوں کے ریفرنڈم کے ذریعے فیصلہ کرنے دو ، آج پوری دنیاسے کشمیریوں کے لئے آواز اٹھائی جارہی ہے ۔

ملتان میں جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ کشمیر پر پاکستان کی تمام جماعتیں متفق ہیں ، ہندوستان تقسیم ہوچکاہے ، بھارت کا ایک بہت بڑا طبقہ حکومت کے خلاف ہے،امریکہ کے سینیٹر ٹرمپ کوخط لکھ رہے ہیں کہ مودی پر دباﺅ ڈالا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی ریاستیںبھی آج مودی سرکار پر نظر رکھے ہوئے ہیں ، دیکھنا ہے کہ بھارتی سپریم کورٹ میں دم ہے یا گھٹنے ٹیک چکی ہے ، مودی میں ہمت ہے تو کرفیو اٹھائے اور سرینگر میں جلسہ کرکے دکھائے ۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھاکہ کل صبح اہم ملاقات ہوگی ، عمران خان بھی موجود ہونگے ، کشمیریوں پر تشدد کرکے شہید کیا جارہا رہاہے ، بھارت میں مسلمانوں کو تیسرا درجہ دیا جارہا ہے ، مقبوضہ کشمیر میں کوئی مریض ہسپتال نہیں پہنچ سکتا ۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کے تین فریق پاکستان ،بھارت اور کشمیری ہیں، دوفریق تیسر ے فریق کومسترد کرچکے ہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ پانچ اگست کے بعد شدید ردعمل سامنے آیا ، مصلحتوں کو بالائے طاق رکھ کرمسئلہ کشمیر اجاگر کررہے ہیں۔ مقبوضہ کشمیر میں انسانیت کوچار دیواری تک محدود کردیاگیاہے، آج مودی کی سوچ پوری دنیا کو اپنا اصل چہرہ دکھا رہی ہے ، مودی نے جوکچھ گجرات میں کیا ، کیا وہ دنیا جانتی ہے؟ ماضی میں لوگ مصلحتوں کا شکار تھے ، ہم نے فیصلہ کیا خواہ تنہا ہی کیوں نہ ہوجائیں ، کشمیریوں کا ساتھ دیں گے ۔ بھارت سے کہتے ہیں کہ کشمیریوں کو ریفرنڈم کے ذریعے فیصلہ کرنے دو ، آج پوری دنیاسے کشمیریوں کے لئے آواز اٹھائی جارہی ہے ، ہم دنیا کے ضمیر کوجگانے کی کوشش کررہے ہیں۔

مزید : اہم خبریں /قومی


loading...