افغانستان، سڑک کنارے نصب بم دھماکہ، 5فوجی ہلاک، طالبان، افغان حکومت کے ایک دوسرے پر حملوں کے بھی الزامات 

افغانستان، سڑک کنارے نصب بم دھماکہ، 5فوجی ہلاک، طالبان، افغان حکومت کے ایک ...

  

 کابل(نیوز ایجنسیاں)افغانستان میں قیام امن کیلئے ایک طرف دوحہ میں بین الافغان مذاکرات جبکہ دوسری جانب افغان فورسز اور طالبان کے درمیان جھڑپوں کا سلسلہ جاری ہے۔ا افغان حکومت کے ترجمان کے مطابق مذاکرات کے آغاز سے قبل طالبان نے ملک کے مختلف علاقوں میں افغان فورسز اور سرکاری تنصیبات پر 18حملے کیے،ہفتہ کے روز  کیے جانیوالے حملوں سے متعلق ان کے پاس درست معلومات نہیں، البتہ ان حملوں میں کمی کے بجائے اضافہ ہوا ہے۔ صوبہ قندروز اور کاپیسا کے حکام نے طالبان کی جانب سے ہفتے کو کیے جانیوالے حملوں کی تصدیق کی۔دوسری جانب طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے اپنے بیان میں کہا قندروز کی مرکزی شاہراہ پر افغان فورسز کے قافلے کو نشانہ بنایا گیا جو جنگجوؤں کیخلاف کارروائی کی غرض سے آ رہا تھا۔ سکیورٹی فورسز نے بغلان اور جوزوان کے صوبوں میں فضائی اور زمینی کارروائی کی تھی جس کا جواب دیا گیا۔دریں اثناء افغا نستا ن میں سڑک کنارے بم دھماکے کے نتیجے میں پانچ فوجی ہلاک ہو گئے۔ صوبہ بدغیس کے علاقہ دہستان میں ایک فوجی گاڑی سڑک کنارے نصب بم ٹکرانے کے باعث زور دار دھما کہ ہوا جسکے نتیجے میں گاڑی میں سوار تمام پانچ فوجی موقع پر ہلاک ہو گئے۔ صوبائی گورنر فیض محمد میرزادہ نے بھی سانحہ کی تصدیق کرتے ہوے دھماکے کی ذمہ داری طالبان پر عائد کی ہے۔

افغانستان دھماکہ 

مزید :

صفحہ آخر -