سٹاک مارکیٹ مندی کا شکار، انڈیکس45۔36پوائنٹس کم ہو گیا، ڈالر پانچ پیسے اور سونا 400روپے تولہ مہنگا 

      سٹاک مارکیٹ مندی کا شکار، انڈیکس45۔36پوائنٹس کم ہو گیا، ڈالر پانچ پیسے ...

  

کراچی (اکنامک رپورٹر) پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں  پیر کو اتار چڑھاؤ کے بعد مندی کا رجحان رہا،کے ایس ای100انڈیکس ٹریڈنگ کے دوران 42700پوائنٹس کی سطح عبور کرنے کے باوجود 42500پوائنٹس کی سطح پر واپس آگیا،مندی کے سبب مارکیٹ میں سرمایہ کاروں کے 8ارب روپے سے زائد ڈوب گئے جبکہ54فیصد حصص کی قیمتیں بھی گر گئیں۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ پیر کو ٹریڈنگ کے دوران اتار چڑھاؤ کا رجحان غالب دیکھا گیا منافع بخش شعبوں میں سرمایہ کاری کی بدولت ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر کے ایس ای100انڈیکس 42743پوائنٹس کی بلند سطح پر جا پہنچا تھا تاہم منافع خوری کی خاطر حصص کے فروخت کے سبب انڈیکس ایک موقع پر 42368پوائنٹس کی پست سطح پر بھی دیکھا گیا تھا مگر کاروبار کے اختتام پر انڈیکس 42500پوائنٹس کی نفسیاتی حد پر بحال تو ہو گیا مگر کاروباری سرگرمیاں مایوس کن رہیں۔پیر کو پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں کے ایس ای100انڈیکس میں 0.64پوائنٹس کا اضافہ ہوا جس سے انڈیکس 42530.67پوائنٹس سے بڑھ کر 42531.31پوائنٹس ہو گیا جبکہ 36.45پوائنٹس کی کمی سے کے ایس ای 30انڈیکس 18034.69پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 30246.21پوائنٹس سے گھٹ کر 30232.67پوائنٹس ہو گیا۔مندی کے سبب مارکیٹ کے سرمائے میں 8ارب17کروڑ 83لاکھ72ہزار 976روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جس کے نتیجے میں سرمائے کا مجموعی حجم79کھرب74ارب 21کروڑ41لاکھ 3ہزار306روپے سے کم ہو کر 79کھرب66ارب 3کروڑ57لاکھ 30ہزار330روپے ہو گیا۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں پیر کو 14ارب روپے مالیت کے 50کروڑ95لاکھ 22ہزار حصص کے سودے ہوئے جبکہ گذشتہ جمعہ کو 17ارب روپے مالیت کے 52کروڑ61لاکھ 86ہزار حصص کے سودے ہوئے تھے۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں پیر کو مجموعی طور رپر428کمپنیوں کا کاروبار ہوا جس میں سے 184کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ،231میں کمی اور 13کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔کاروبار کے لحاظ سے حیسکول پیٹرول 6کروڑ70لاکھ،پاک انٹر نیشنل بلک 4کروڑ29لاکھ،فوجی فوڈز لمیٹڈ 2کروڑ98لاکھ،یونٹی فوڈز لمیٹڈ 2کروڑ53لاکھ اور بینک آف پنجاب 2کروڑ4لاکھ حصص کے سودوں سے سرفہرست رہے۔قیمتوں میں اتار چڑھاؤ کے اعتبار سے نیلسے پاکستان کے بھاؤ میں 136.99روپے کا اضافہ ہوا جس سے اسکے حصص کی قیمت 6787.00روپے ہو گئی اسی طرح 46.70روپے کے اضافے سے ہینو پاک موٹرز کے حصص کی قیمت 669.47روپے ہو گئی جبکہ یونی لیور فوڈز ایکس ڈی کے حصص کی قیمت میں 100.00روپے کی کمی واقع ہوئی جس سے اسکی حصص کی قیمت 13400.00روپے ہو گئی اسی طرح66.08روپے کی کمی سے اسلینڈ ٹیکسٹائل کے حصص کی قیمت 937.00روپے پر آ گئی۔انٹر بینک میں پیر کو روپے کے مقابلے ڈالر مہنگا ہو گیا جبکہ مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قدر مستحکم رہی۔فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق پیر کو انٹر بینک میں روپے کے مقابلے ڈالر کی قدر میں 5پیسے کا اضافہ ہوا جس سے ڈالر کی قیمت خرید 166روپے سے بڑھ کر166.05روپے اور قیمت فروخت166.20روپے سے بڑھ کر166.25روپے ہو گئی تاہم مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت خرید 166روپے اور قیمت فروخت166.40روپے پر بدستور برقرار رہی۔فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق پیر کو یورو کی قدر میں 10پیسے کا اضافہ ہوا جس سے یورو کی قیمت خرید 195.30روپے سے بڑھ کر 195.60روپے اور قیمت فروخت197.50روپے سے بڑھ کر197.60روپے ہو گئی جبکہ 1روپے کے ریکارڈ اضافے سے برطانوی پونڈ کی قیمت خرید 212روپے سے بڑھ کر213روپے اور قیمت فروخت214روپے سے بڑھ کر215روپے پر جا پہنچی۔عالمی مارکیٹ میں فی اونس سونے کی قیمت8ڈالر کے اضافے سے 1948ڈالر ہو گئی جس کے بعد ملکی صرافہ مارکیٹوں میں بھی سونے کی قیمت میں اضافے کا رجحان رہا۔آل پاکستان سپریم کونسل جیولر زایسوسی ایشن کے مطابق پیر کو ملکی صرافہ مارکیٹوں میں 400روپے کے اضافے سے ایک تولہ سونے کی قیمت1لاکھ14ہزار400روپے اور دس گرام سونے کی قیمت343روپے کے اضافے سے98ہزار80روپے ہو گئی۔

سٹاک مارکیٹ

مزید :

صفحہ آخر -