دنیا بھر میں صحافیوں کیخلاف پر تشدد واقعات میں اضافہ ہوا: یونیسکو 

دنیا بھر میں صحافیوں کیخلاف پر تشدد واقعات میں اضافہ ہوا: یونیسکو 

  

 واشنگٹن (این این آئی)اقوام متحدہ نے دنیا بھر میں صحافیوں کیخلاف پرْتشدد کے واقعات میں تیزی سے اضافے کی دیگر وجوہات کے علاوہ ایک بڑی وجہ پولیس اور سیکیورٹی فورسز کو قرار دے دیا۔میڈیا رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ کے ذیلی ادارے ثقافتی ایجنسی نے کہا کہ امسال جنوری اور جون کے درمیان 21 مظاہروں کے دوران صحافیوں پر حملے ہوئے اور انہیں گرفتار کیا گیا یا بعض واقعات میں ہلاک ہوئے۔رپورٹ میں کہا کہ گزشتہ پانچ برس میں پولیس اور سیکیورٹی فورسز کے غیرقانونی طاقت کے استعمال کے دوران صحافیوں کیخلاف پرتشدد واقعات میں اضافہ ہوا۔ملازمت کے دوران ہلاک ہونے والے رپورٹرز شام، میکسیکو، اسرائیل، نکاراگوا، شمالی آئرلینڈ، نائیجیریا اور عراق میں کام کرتے تھے۔رپورٹ میں کہا گیا کہ مظاہروں کی کوریج کرنے کی کوشش کرنے والے دنیا بھر کے سینکڑوں صحافیوں کو ہراساں، مارا پیٹا، ڈرایا گیا۔ڈائریکٹر جنرل آڈری نے کہا کہ 'ہم بین الاقوامی برادری اور تمام متعلقہ حکام سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ یقینی بنائیں کہ صحافیوں کے بنیادی حقوق کو برقرار رکھا جائے۔یونیسکو نے کہا کہ مظاہرے اکثر معاشی ناانصافی، حکومتی بدعنوانی اور بڑھتی ہوئی آمریت کیخلاف ہوتے ہیں جس سے کچھ حکومتوں کو متوازن رپورٹنگ کی روک تھام میں اپنا مفاد حاصل ہوجاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ نے متعدد قراردادوں میں پریس کے خلاف سیاسی رہنماؤں کی طرف سے مخالف بیان بازی پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

یونیسکو

مزید :

صفحہ آخر -