موٹر وے واقعہ‘ جرم میں ملوث افراد کو سرعام پھانسی دی جائے‘ اعجاز الحق 

  موٹر وے واقعہ‘ جرم میں ملوث افراد کو سرعام پھانسی دی جائے‘ اعجاز الحق 

  

ہارون آباد (نامہ نگار) مسلم لیگ ضیاء کے سربراہ و سابق وفاقی وزیر محمد اعجازالحق نے وائٹل ہاوس ہارون آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ 20ستمبر کو ہونے والی اے پی سی کے بعد ایک اور این آر او ہوگا جیسا کہ لندن میں نواز شریف کی بینظیر بھٹو کے ساتھ اور (بقیہ نمبر7صفحہ 6پر)

سی او ڈی کے بعد جنرل پرویز مشرف اور بینظیر بھٹو کی دبئی ملاقات میں این آر او ہوا تھا، انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کی 20ستمبر کو ہونے والی اے پی سی کا وہی حشر ہوگا جو نواز شریف اور بینظیر بھٹو کے درمیان لندن میں ہونے والی اے پی سی کا ہوا اور سی او ڈی کے بعد جنرل پرویز مشرف اور بینظیر کی دبئی میں ملاقات اور این آر او ملنے کے بعد جس کا اختتام ہوا، ایسی اے پی سی ملک کو کمزور کرنے کے متراد ف ہے،محمد اعجازالحق نے حالیہ موٹر وے واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ان جیسے واقعات کی روک تھام کیلئے ریاست مدینہ کی رٹ لگانے والے پارلیمنٹ میں قانون سازی کرائیں اور ایسے گھناؤنے جرائم میں ملوث افراد کو سرعام پھانسی دی جائے جیسا کہ جنرل ضیاء الحق کے دور میں ہوا، دو تین کیس رونما ہونے پر سر عام پھانسی دی گئی تھی اور اس کے بعد جرائم کا خاتمہ ممکن ہوسکا، اپنے حلقہ اور عوام کے مسائل کے حل کیلئے وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے جلد ملاقات کروں گا اور آئندہ بلدیاتی انتخابات میں ہم پورے ضلع بہاولنگر میں اپنے امیدوار نامزد کریں گے۔

اعجاز الحق

مزید :

ملتان صفحہ آخر -