پشاور، آل گورنمنٹ ایمپلائز کا مطالبات کے حل کیلئے احتجاجی مظاہرہ 

پشاور، آل گورنمنٹ ایمپلائز کا مطالبات کے حل کیلئے احتجاجی مظاہرہ 

  

پشاور(سٹی رپورٹر)آل گورنمنٹ ایمپلائزر کو آرڈینیشن کے زیر اہتمام گزشتہ روز صوبا ئی اسمبلی کے سامنے اپنے مطالبات کے میں حق میں احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔جس کی قیادت آل پاکستان کلرکس ایسو سی ایشن پاکستان کے صو بائی صدرمحمد اسلم خان کررہے تھے۔احتجاجی مظاہرے میں مزدور اتحاد میونسپل ورکر یونین سٹی اور آل ٹاؤنز ضلع پشاور کے چیئرمین سید قیصر باچا،فضل محمود اورآل پاکستان درجہ چہارم ایسوسی ایشن خیبر پختو نخوا کے صدر اکبر خان مہمند،قاسم خان سمیت صو بہ بھر کے 61تنظبموں کے سربراہان اور ورکروں نے شرکت کی۔مظاہرے سے خطاب میں آل پاکستان کلرکس ایسو سی ایشن پاکستان کے صو بائی صدرمحمد اسلم خان نے کہا کہ حکومت کی طرف سے سالانہ ایکریمنٹ کا خاتمہ،پنشن کا خاتمہ،ریٹائرمنٹ عمر کی حد میں کمی،نجکاری پالیسی اور پوسٹنگ کا دو سالہ حکم نا مہ کسی صورت قبول نہیں کرسکتے۔انہوں نے کہا کہ گریڈ 1سے 22تک کے ملا زمین کے بچوں کی بھرتیوں میں 50%ایمپلائزسن کوٹہ گریڈ ایک سے گریڈ 16تک مقرر کیا جائے میڈیکل الاؤنس اور کنوینس الاؤنس میں موجودہ مہنگائی کی شرح سے اضافہ کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ حکومت حوش کے ناخن لے ان کی ناکام پالیسیوں کی وجہ سے مزدور کی زندگی اجیرن بن گئی ہے۔انہو ں نے چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس وقار احمد سیٹھ نے فوری طور پر سوموٹو ایکشن لینے کا مطالبہ بھی کیا ہے۔مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے مزدور اتحاد میونسپل ورکر یونین سٹی اور آل ٹاؤنز ضلع پشاور کے چیئرمین سید قیصر باچانے کہا کہ جملہ ایڈ ہاک ریلیف الاؤنسز کو فوری طور پر بنیادی تنخواہ میں ضم کیا جائے اور پے ویژن کی جائے۔انہوں نے کہا کہ پے اینڈ پنشن کمیشن میں سرکاری ملا زمین کی ایسو سی ایشن /یونینز کے نما ئندوں کو نمائندگی دی جائے اور کمیشن کی سفارشات فوری طور پر شائع کرنے کیلئے اقدامات کئے جائیں۔انہوں نے کہا کہ تمام سرکاری ملازمین کی ویلیفئر سکیمیں بشمول سی پی فنڈ /جی پی فنڈ،گروپ انشورنس،بنوؤلنٹ فنڈ اور انشورنس کا نظام فرسودہ اور ناقص ہوچکا ہے جو کہ سرکاری ملا زمین کیلئے منافع بخش بنانے کیلئے نئے بورڈ کی تشکیل کی جائے۔مظاہرے سے خطاب میں آل پاکستان درجہ چہارم ایسوسی ایشن خیبر پختو نخوا کے صدر اکبر خان مہمند نے کہا کہ تمام سرکاری ملازمین کو وفاقی و صوبائی سیکرٹریٹ ملازمین کی طرز پر یوٹیلیٹی الاؤنس /سپیشل الاؤنس دیکرر تضاد اور تفریق کو ختم کیا جائے۔وفاقی اور صوبائی حکومتوں کی جانب سے ریٹائرمنٹ کی عمر 60سال سے کم یا زیادہ کرنے کی بھر پور مخالفت کی جاتی ہے۔انہوں نے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ سرکاری ملا زمین کو 60سال قبل ریٹائرڈ کرنے کے فیصلے اور اقدامات واپس لئے جائیں۔آل پاکستان کلرکس ایسو سی ایشن پاکستان کے صو بائی صدرمحمد اسلم خان نے کہا کہ اگر مطالبات نہ مانے گئے تو 14اکتوبر کو پارلیمنٹ ہاؤس کے سامنے تاریخی دھرنا ریکارڈ کرینگے جو کہ مطالبات نہ ماننے تک جاری رہے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -