عقیدہ ختم نبوت ؐ مسلمانوں کے ایمان کی اساس ہے،کانفرنس 

عقیدہ ختم نبوت ؐ مسلمانوں کے ایمان کی اساس ہے،کانفرنس 

  

کوھاٹ (بیورو رپورٹ) کوھاٹ کے کوتوالی مسجد میں عظیم الشان ختم نبوت کانفرنس منعقد ہوئی جس میں ضلع کوھاٹ کے ہزاروں افراد نے شرکت کی‘کانفرنس میں کوھاٹ کے علاوہ پنجاب سے مقررین نے شرکت کی۔کانفرنس سے مولانا نور محمد ہزاروی نے کہاہے کہ عقیدہ ختم نبوت مسلمانوں کے ایمان کی اساس ہے آپؐ نبی آخرالزمان ہیں اور آپؐ پر نبوت کا سلسلہ ختم ہوگیا آپؐ کی نبوت کامنکر کافر اور مرتد ہے جھوٹے مدعیان نبوت کا سلسلہ بھی نبی کریمؐ کے زمانے سے ہی چل نکلا لیکن آپ ؐ کے جانثار پیروکاروں نے ان کذابوں کو نیست ونابود کرکے رکھ دی انہوں نے کوتوالی مسجد مین بازار کوھاٹ میں منعقدہ یوم تحفظ ختم نبوت کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسلام مکمل ضابطہ حیات ہے جو انسانیت کے تمام مسائل کا حل پیش کرتاہے اللہ کے عطاکردہ نظام میں کسی قسم کی پیوند کاری سے ہمارے مسائل حل نہیں ہوسکتے تحفظ ختم نبوت کا پلیٹ فارم تمام مکاتب فکر کے لئے مضبوط ترین قدر مشترک ہے انہوں نے کہا کہ اسلام اور پاکستان کے دشمنوں کو ہر حال میں شکست سے دوچار کرنے کے لئے قومی سطح پر اتحاد ویگانگت کو فروغ دینے کی اشد ضرورت ہے اور قادیانیوں کے بارے میں نرم گوش پاکستان کے لئے زیر قاتل ہے انہوں نے مزید کہا کہ مقتدر قوتیں اور سیاستدان اپنی صفوں سے قادیانیوں اور وطن دشمن عناصر کو نکال باہر کریں اورملکی دفاع کو یقینی بنائیں عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کوھاٹ کے زیر اہتمام اس سال بھی یوم ختم نبوت عقیدت واحترام کے ساتھ منایاجارہاہے یہ جلسہ ہر سال 7 ستمبر 1974 ء میں پاکستان کی قومی اسمبلی میں متفقہ طورپر قادیانیوں کو کافر قرار پانے کی یاد میں منایا جاتا ہے ضلع کوھاٹ کے مسول مولوی مجاہدین نے کہا کہ یوم ختم نبوت کے موقع پر عوام الناس خصوصاً نوجوان نسل کو قادیانیوں کے کفریہ عقائد ونظریات سے باخبر اور روشن کیاجاتاہے اور ساتھ ہی ساتھ قادیانیوں کی مصنوعات خصوصاً شیزان جوس‘چٹنی‘اچارذائقہ گھی وغیرہ کے متعلق عوام الناس میں آگاہی مہم چلائی جاتی ہے تاکہ لوگ ان کی خریداری سے اجتناب کریں ساتھ ہی ساتھ حکومت وقت کو بھی خبردار کیاجاتاہے کہ وہ 1974 ء کی متفقہ قومی اسمبلی کی قرارداد کی روشنی میں کافر قرار پانے والوں کی پشت پناہی سے بازرہیں اوران کو 1984 ء میں جاری ہونے والے صدارتی آردیننس کا پابند بنایاجائے اعلیٰ عہدوں سے برطرف کیاجائے اورشعائر اسلام کو استعمال کرنیکی ہرگز اجازت نہ دی جائے اس حوالے سے ہر سال یوم ختم نبوت منایاجاتاہے جلسہ کی صدارت عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے نائب مرکزی امیر خواجہ خواجگان حضرت مولانا صاحبزادہ عزیر احمدآف کندیاں شریف میانوالی نے کی اس کے علاوہ مقامی علماء کرام نے بھی جلسہ سے خطاب کیا۔اس موقع پر شیخ الحدیث مولانا عبدالمنان‘ مولانا عبیداللہ انور رحیمی‘ مولانا محمد آصف سمیت طلباء سمیت تمام مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والے افراد کی کثیر تعداد بھی موجود تھی مولانا حافظ محمد آصف نے نعت اور نظمیں پڑھیں کوھاٹ شہر تاجدار ختم نبوت زندہ باد اورناموس صحابہ پر جان بھی قربان ہے کے نعروں سے گونج رہا تھا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -