حسن کو بے حجاب ہونا تھا | اسرارالحق مجاز|

حسن کو بے حجاب ہونا تھا | اسرارالحق مجاز|
حسن کو بے حجاب ہونا تھا | اسرارالحق مجاز|

  

حسن کو بے حجاب ہونا تھا

شوق کو کامیاب ہونا تھا

ہجْرمیں کیف اِضطراب نہ پُوچھ

خُونِ دِل بھی شراب ہونا تھا

تیرے جلوؤں میں گِھر گیا آخر

ذرّے کو آفتاب ہونا تھا

کچھ تمہاری نگاہ کافر تھی

کچھ مجھے بھی خراب ہونا تھا

رات تاروں کا ٹوٹنا بھی مجاز

باعثِ اِضطراب ہونا تھا

شاعر: اسرارلحق مجاز

(شعری مجموعہ: آہنگ، سالِ اشاعت، 1952)

Husn    Ko    Be Hijaab     Hona   Tha

Shaoq    Ko    Kaamyaab  Hona   Tha

Hijr    Men Kaif -e - Iztaraab    Na    Pooch

Khoon -e- Dil    Bhi   Sharaab   Hona    Tha

Teray    Jalwon    Men    Ghir    Gaya   Aakhir

Zarray   Ko    Aaftaab    Hona    Tha

Kuch    Tuhmaari    Nigaah    Kaafir   Thi

Kuch    Mujhay   Bhi   Kharaab    Hona    Tha

Raat    Taron   Ka   Tootna    Bhi   MAJAZ

Baais -e- Iztaraab    Hona    Tha

Poet: Israrul    Haq   Majaz

مزید :

شاعری -سنجیدہ شاعری -