دنیا کے سب سے بڑے اسلامی ملک میں ماسک نہ پہننے والوں کو کورونا سے مرنے والوں کی قبریں کھودنے پر لگادیا گیا

دنیا کے سب سے بڑے اسلامی ملک میں ماسک نہ پہننے والوں کو کورونا سے مرنے والوں ...
دنیا کے سب سے بڑے اسلامی ملک میں ماسک نہ پہننے والوں کو کورونا سے مرنے والوں کی قبریں کھودنے پر لگادیا گیا
سورس:   creative commons license

  

جکارتہ(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس کی وجہ سے بیشتر ممالک میں فیس ماسک پہننے اور سماجی میل جول میں فاصلہ رکھنے کی پابندی عائد ہے اور اس کی خلاف ورزی پر لوگوں کو جرمانے اور سزائیں دی جا رہی ہیں۔ گزشتہ دنوں انڈونیشیاءکے جزیرے جاوا پر پولیس نے فیس ماسک نہ پہننے والے 8افراد کو ایک ایسی سزا دے ڈالی کہ سن کر کوئی بھی شخص فیس ماسک کے بغیر گھر سے نہ نکلے گا۔ جکارتہ پوسٹ کے مطابق پولیس نے ان لوگوں کو روکا اور فیس ماسک پہننے کو کہا لیکن انہوں نے پولیس کے کہنے پر بھی فیس ماسک پہننے سے انکار کر دیا جس پر پولیس والوں نے انہیں گورکنوں کے ساتھ قبریں کھودنے پر لگا دیا۔

رپورٹ کے مطابق مقامی سیاستدان سویونو کا کہنا تھا کہ ”ہمارے پاس علاقے میں گورکنوں کی کمی ہے۔ ہمارے پاس اس وقت صرف 3گورکن ہیں، چنانچہ جب پولیس نے ان لوگوں کو سزا دینی چاہی تو گورکنوں کی کمی کے پیش نظر انہیں قبریں کھودنے پر لگا دیا۔ ان میں سے ہر دو افراد کو ایک قبر کھودنے پر لگایا گیا تھا اور قبر کھودنے کے بعد انہیں جانے کی اجازت دے دی گئی۔واضح رہے کہ انڈونیشیاءمیں اب تک کورونا وائرس کے 2لاکھ 25ہزار کیس سامنے آ چکے ہیں۔ ان میں سے 1لاکھ 61ہزار افراد صحت مند ہو چکے ہیں جبکہ 8ہزار 965اموات ہو چکی ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -