وفاقی وزراء کے الزامات مسترد، الیکشن کمیشن کا فواد اور سواتی کو نوٹس بھیجنے کا فیصلہ 

    وفاقی وزراء کے الزامات مسترد، الیکشن کمیشن کا فواد اور سواتی کو نوٹس ...

  

  اسلام آباد(سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) الیکشن کمیشن نے وفاقی وزراء کی جانب سے عائد کردہ الزامات کو مسترد کرتے ہوئے وزیرریلوے اعظم سواتی اوروزیر اطلاعات فواد چوہدری کو نوٹس جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس میں ان کی  طرف سے الیکشن کمیشن پرعائد کیے گئے الزامات پر ان سے ثبوت مانگنے کا فیصلہ بھی کیا ہے،الیکشن کمیشن  نے پیمرا سے متعلقہ  ریکارڈ بھی طلب کر لیا۔منگل کو الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے  کے مطابق الیکشن کمیشن کا  اہم اجلاس ہوا جس کی صدارت چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ  نے کی۔اجلاس میں ممبران الیکشن کمیشن  نثار احمد درانی  اور شاہ محمد جتوئی  کے علاوہ  الیکشن کمیشن  کے سینئر افسران  شریک ہوئے۔اس اجلاس میں  الیکشن کمیشن  اور چیف الیکشن کمشنر  پر لگائے  گئے  الزامات کو زیر بحث  لایا گیا۔  الیکشن کمیشن  نے  ان الزامات کی پرزور  الفاظ میں  تردید کی اور انہیں مسترد کردیا۔صدرپاکستان  اور سینیٹ کی قائمہ کمیٹی کی میٹنگ  کے دوران  وفاقی  وزیر برائے   ریلوے   اعظم خان سواتی  کی طرف سے  الیکشن کمیشن  پر جو الزامات  عائد کیے گئے  ہیں اس پر ان  سے ثبوت  مانگنے کا فیصلہ کیا گیا۔اس کے علاوہ  فواد چوہدری  کی طرف سے  پریس بریفنگ  کے دوران  الیکشن کمیشن اور چیف الیکشن کمشنرپر  جن الفاظ  میں الزام تراشی کی گئی۔ اس  پر الیکشن کمیشن  نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ دونوں وزراء کو نوٹس جاری کئے جائیں  تاکہ اس سلسلے  میں  مزید کارروائی عمل میں لائی جاسکے۔الیکشن کمیشن  نے پیمرا سے  متعلقہ   ریکارڈ بھی طلب کر لیا۔ اور دفتر کو حکم دیا گیا کہ  وہ ایوان  صدر،سینٹ قائمہ کمیٹی کی کارروائی  اور پریس  بریفنگ  سے متعلق  تما م ریکارڈ  مرتب کر کے مزید  کارروائی کے لئے الیکشن کمیشن  کے سامنے پیش کرے۔دریں اثناچیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ  نے کہا  ہے کہ بلدیاتی انتخابات کیلئے مزید تاخیر نہیں کی جاسکتی لہذا انتخابات کے لیے آرڈر جاری کرنے جارہے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق  الیکشن کمیشن میں بلوچستان میں بلدیاتی انتخابات کے حوالے سے چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی جس میں سیکریٹری لوکل گورنمنٹ بلوچستان احمد رضا اور ایڈووکیٹ جنرل بلوچستان الیکشن کمیشن میں پیش ہوئے۔ اس موقع پر چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ نے کہا کہ کنٹونمنٹ بورڈ انتخابات کے بعد بلدیاتی انتخابات کرانا ہیں، کنٹونمنٹ بورڈ انتخابات کے انعقاد پر وزارت دفاع کے شکرگزار ہیں، صوبائی حکومتیں بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کیلئے اپنی ذمہ داری پوری کریں جب کہ الیکشن کمیشن بلدیاتی انتخابات کرانے کی اپنی ذمہ داری پوری کرے گا۔چیف الیکشن کمشنر کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن بلدیاتی انتخابات کے لیے آرڈر جاری کرنے جارہا ہے، مسائل کی وجہ سے بلدیاتی انتخابات کیلئے مزید تاخیر نہیں کی جاسکتی، بلدیاتی ادارے جمہوریت کی بنیاد ہے، بلدیاتی اداروں کی عدم موجودگی کے باعث عوام کو جمہوری حق سے محروم رکھا جارہا ہے۔دوسری طرف وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری کا کہنا ہے کہ الیکشن کمیشن کا نوٹس آیا تو تفصیلی جواب دیں گے۔الیکشن کمیشن کی طرف سے نوٹس بھجوانے کے فیصلے کے بعد سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر د عمل دیتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن کا احترام اپنی جگہ لیکن شخصیات کے سیاسی کردار پر بات کرنا پسند نہیں تو اپنا کنڈکٹ غیر سیاسی رکھیں۔ان کا کہنا تھا کہ ادارے کی طرف سے نوٹس آیا تو تفصیلی جواب دیں گے، بحیثئت ادارہ الیکشن کمیشن کی حیثئت مسلمہ ہے لیکن شخصیات غلطیوں سے مبرا نہیں اور تنقید شخصیات کے کنڈکٹ پر ہوتی ہے ادارے پر نہیں۔  

الیکشن کمیشن

مزید :

صفحہ اول -