شوگر، بلڈ پریشر، دل کی ادویات کی قیمتوں میں مزید 17فیصد تک اضافہ 

    شوگر، بلڈ پریشر، دل کی ادویات کی قیمتوں میں مزید 17فیصد تک اضافہ 

  

 لاہور(جنرل رپورٹر) مہنگائی کی ستائی عوام پر حکومت کی جانب سے ایک اور مہنگائی بم گرا دیا گیا شوگر،بلڈ پریشر اور دل کے عارضہ میں مبتلا مریضوں کے استعمال ہونے والی ادویات کی قیمتوں میں 17فیصد تک اضافہ کر دی گیا۔تفصیلات کے مطابق انسولیٹڈ نامی انسولین کی قیمت 50روپے تھی جس کی قیمت بڑھا کر 806روپے کر دی گئی جبکہ مکسٹرڈ نامی انسولین کی قیمت 67روپے تھی جس کی موجودہ قیمت 763تک پہنچ چکی ہے جبکہ اے ٹو اے 50ملی گرام بیس گولیوں کی قیمت 55روپے تھی جو اب 457روپے میں فروخت کی جا رہی ہے۔اس حوالے سے شہریوں کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے دل،بلڈ پریشراور شوگر جیسے امراض کی ادویات میں اضافہ کرنے کے باعث غریب موت کے منہ میں چلا جائے گا آگے اشیاء ضروریہ کی قیمتیں آسمانوں سے باتیں کر رہی ہیں ایسے میں ادویات کی قیمتوں میں اضافہ سراسر زیادتی اور ظلم ہے۔

ادویات مہنگی

مزید :

صفحہ اول -