عمران خان کو پیوٹن کا ٹیلیفون، افغان صورتحال، شنگھائی تعاون و تنظیم پر تبادلہ خیال 

  عمران خان کو پیوٹن کا ٹیلیفون، افغان صورتحال، شنگھائی تعاون و تنظیم پر ...

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) روسی صدر ولادی میر پیوٹن نے وزیراعظم عمران خان کو ٹیلیفون کر کے افغان صورتحال پر تبادلہ خیال کیا ہے۔وزیراعظم کے معاون خصوصی شہباز گل نے ٹوئٹر پر بتایا گیا کہ روسی پیوٹن نے وزیراعظم عمران خان کو ٹیلیفون کیا ہے۔ دونوں رہنماؤں کے درمیان افغانستان کی موجودہ صورتحال، دو طرفہ تعاون اور شنگھائی تعاون تنظیم سے متعلق بات چیت کی گئی۔وزیراعظم عمران خان نے علاقائی سلامتی اور خوشحالی کیلئے افغانستان میں امن و استحکام کی اہمیت پر زور دیا۔ دونوں رہنماؤں نے قریبی رابطے میں رہنے پر اتفاق کیا۔پی ایم آفس کی طرف سے جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق وزیر اعظم نے دونوں ممالک کے مابین مختلف شعبوں میں مزید تعاون اور افغانستان کے معاشی بحران سے بچنے کی ضرورت پر زور دیا۔عمران خان کا کہنا تھا کہ بین الاقوامی برادری افغانستان کے حوالے سے کردار ادا کرے، عالمی برادری اس اہم موڑ پرافغان عوام کو تنہا نہ چھوڑیں۔ عالمی برادری کوافغانستان کے ساتھ رابطوں میں رہنا چاہیے، افغانستان کوفوری طورپرانسانی بنیادوں پرامداد کی ضرورت ہے، پاکستان اور روس کے درمیان افغانستان کی صورت حال میں قریبی رابطہ اور مشاورت انتہائی اہمیت کی حامل ہے۔ افغانستان میں امن واستحکام علاقائی امن وخوشحالی کیلئے ضروری ہے۔

پیوٹن عمران رابطہ

 اسلام آباد(نیوزایجنسیاں) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ مقامی حکومت جمہوریت کا بنیادی ڈھانچہ ہے، بلدیاتی نمائندوں کے براہ راست انتخاب کو یقینی بنایا جائے۔ وزیر اعظم کی زیر صدارت پنجاب میں بلدیاتی امور سے متعلق اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں پنجاب حکومت نے وزیراعظم کو صوبے میں نئے لوکل گورنمنٹ ماڈل پر بریفنگ دی۔۔وزیر اعظم نے اس موقع پر اس بات کو  دہرایا کہ مضبوط بلدیاتی نظام کے بغیر جمہوریت نامکمل ہے۔وزیراعظم نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ وہ بلدیاتی نمائندوں کے براہ راست انتخاب کو یقینی بنائیں، اور پنجاب میں بلدیاتی انتخابات فوری طور پر کروانے کیلئے اقدامات کریں۔  دوسری جانب وزیراعظم عمران خان نے لاہور، راولپنڈی، ملتان اور پشاور کنٹونمنٹ بورڈ کے انتخابات کے نتائج کی تجزیاتی رپورٹ تیار کرانے کا فیصلہ کر لیا۔ذرائع نے بتایا کہ بڑے شہروں میں امیدواروں کا چناؤاور ووٹرز کے ساتھ پارٹی قائدین کا رویہ بھی رپورٹ میں شامل ہو گا۔تفصیلات کے مطابق کنٹونمنٹ بورڈز کے انتخابات میں پنجاب کے تین بڑے ڈویڑنز میں شکست کیوں ہوئی، وزیراعظم نے رپورٹ طلب کر لی۔وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے ملاقات کے موقع پر وزیراعظم عمران خان نے لاہور، راولپنڈی اور ملتان میں شکست کے حوالے سے تفصیلی رپورٹ طلب کرتے ہوئے کہا کہ انتخابات میں شکست کی وجوہات سمیت غیر تسلی بخش نتائج کے ذمہ داران کا تعین کیا جائے۔وزیراعظم نے ٹکٹوں کی تقسیم، انتخابی مہم اور دیگر عوامل سے بھی جلد آگاہ کرنے کی ہدایت کی ہے۔ تاہم گوجرانوالہ کینٹ بورڈ میں کامیابی پر وزیراعظم نے اطمینان کا اظہار کیا ہے۔ ادھر ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان کا سیف اللہ نیازی اور عامر کیانی کو پارٹی عہدوں سے فارغ کرنے کا فیصلہ،تمام غیر منتخب  تنظیموں کے عہدیداران کو بھی فارغ کرنے کا فیصلہ ہوگیا،وزیراعظم آج لاہور کا ہنگامی دورہ کررہے ہیں جس میں کئی اہم فیصلہ کئے جائینگے۔ ذرائع کے مطابق عمران خان دورے میں تمام صوبوں کے علیحدہ علیحدہ چیف آرگنائزر مقرر کرکے پارٹی کی تنظیم نو کا فیصلہ کیا جائے گا۔مزید برآں وزیراعظم سے سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصراور وفاقی وزیر نجکاری محمد میاں سومرو نے الگ الگ ملاقاتیں کیں،ذرائع کاکہنا ہے کہ اسد قیصر سے انتخابی اصلاحات خصوصاً ای وی ایم بارے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ انتخابی اصلاحات سمیت اہم قانون سازی کیلئے قومی اسمبلی اجلاس اور سینیٹ کامشترکہ اجلاس بلانے کا فیصلہ کیا گیا۔جبکہ محمد میاں سومرو نے نیشنل پاور پارکس مینجمنٹ کمپنی لمیٹڈ، جناح کنونشن سنٹر اور سروسز انٹرنیشنل ہوٹل لاہور کی نجکاری کی موجودہ صورتحال پر بریفنگ دی گئی۔ وزیراعظم کو پاکستان اسٹیل ملز (PSM) کی بحالی کے لیے غیر ملکی سرمایہ کاروں کو راغب کرنے کے لیے جاری روڈ شوز (13-21 ستمبر) کے حوصلہ افزا نتائج سے بھی آگاہ کیا گیا۔ وزیراعظم نے شفافیت کو یقینی بنانے کے لیے تمام ضروری اقدامات کرتے ہوئے نجکاری کے عمل کو مکمل کرنے پر توجہ دینے کی ہدایت کی۔ 

عمران خان 

مزید :

صفحہ اول -