بھارتی ریاست اتر پردیش میں انتہا پسند ہندو کے تشدد سے ایک اور مسلمان نوجوان قتل

بھارتی ریاست اتر پردیش میں انتہا پسند ہندو کے تشدد سے ایک اور مسلمان نوجوان ...

  

 اترپردیش(این این آئی)بھارتی ریاست اتر پردیش کے ضلع شاملی میں ہندو بلوائیوں نے ایک 17سالہ مسلم نوجوان کو وحشیانہ تشدد کر کے قتل کر دیا۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق پولیس نے کہاہے کہ ضلع کے گاؤں بنت میں مسلم نوجوان سمیر احمد کے قتل کا مقدمہ ارشد مندی پولیس اسٹیشن میں درج کرلیاگیا ہے اور آٹھ ملزمان میں سے مرکزی ملزم کو گرفتار کرلیاگیا ہے۔ اہلخانہ کے مطابق سمیر کو حال ہی میں مقامی ڈاٹا سروس سنٹر میں ملازمت ملی تھی اور وہ جمعرات کو ضروری آدھار کارڈ بنوانے گیا تھا تاہم سمیر کو محض اس لیے وحشیانہ تشدد کرکے قتل کر دیا گیا کیونکہ اس کی کہنی رش کے دوران ایک لڑکے کو لگی اور اس کا یہی جرم اس کی موت کی وجہ بنا۔ سمیر کے اہلخانہ کے مطابق کہنی لگنے پرہندو انتہا پسند تنظیموں سے تعلق رکھنے والے 8سے 10نوجوانوں نے اسے وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنایا اور سر کے بل زمین پر پٹکا جس سے اس کی موت واقع ہو گئی۔

نوجوان قتل 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -