عدالتوں میں سکیورٹی اقدامات سے حالات پہلے سے بہتر ہیں، مبشر اعوان

  عدالتوں میں سکیورٹی اقدامات سے حالات پہلے سے بہتر ہیں، مبشر اعوان

  

لاہور(نامہ نگار)ماتحت عدالتوں میں پولیس کی جانب سے سخت سکیورٹی اور تلاشی کے موثر اقدامات کے بعد قتل وغارت کے واقعات میں کمی آگئی  اس سلسلے میں سیشن کورٹ میں سکیورٹی ٹیم کے انچار ج انسپکٹرمبشر اعوان کا کہناہے کہ کچھ ماہ قبل پے درپے ماتحت عدالتوں میں قتل کے واقعات رونما ہوئے جس میں پولیس اہلکاروں سمیت ملزم اورسائلین جاں بحق ہوئے جس کاانتہائی افسوس ہے،ان واقعات کے تدارک کیلئے افسران بالا نے سکیورٹی کے موثر اقدامات کئے جس کے اب حالات پہلے سے بہت بہتر ہیں،انہوں نے مزیدکہا کہ اس وقت ان کی مین گیٹ سمیت دیگر جگہوں پر ان کی ٹیم کے 12سے زائد اہلکار ڈیوٹیوں پر مامور ہیں،یہ سکیورٹی ٹیم اپنی جان ہتھیلی پر رکھ کر ججوں،وکلاء اور سائلین کا تحفظ کررہی ہے،عدالتوں میں آنے والے ہرشخص کی جامع تلاشی لی جاتی ہے اس کے بعد ہی اسے اندر داخل ہونے کی اجازت دی جاتی ہے، انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں سیکورٹی اہلکاروں سے وکلاء کمیونٹی بھی تعاون کرتی ہے ،انہوں نے بتایا کہ ایک روز قبل ہی سیشن عدالت کی سیکورٹی ٹیم نے ججز گیٹ سے ایک شخص محمد سعید کواسلحہ سمیت گرفتار کیا،جسے بعدمیں تفتیش کے لے تھانہ اسلام پورہ کے حوالے کردیاگیا،ملزم کے قبضے سے تیس بور پستول ایک میگزین اور 12 گولیاں برآمدہوئیں تھیں،اس طرح کے درجنوں ملزموں کو پکڑ پر ان کی سیکورٹی ٹیم نے پولیس کے حوالے کیا ہے جو اپنے مخالفین کونقصان پہنچانے کے لئے اسلحہ لے کرعدالتوں میں آنے کی کوشش کرتے ہیں،ایسے مضموم مقاصد رکھنے والے ملزموں کوسیکورٹی ٹیم اپنی جان کی پروا کئے بغیرپکڑنااپنا فرض سمجھتی ہے۔

مبشر اعوان 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -