پرائیویٹ کلینک پر حملہ، توڑ پھوڑ،دوروز بعدمقدمہ درج

پرائیویٹ کلینک پر حملہ، توڑ پھوڑ،دوروز بعدمقدمہ درج

  

کرم پور، میلسی (نمائندہ پاکستان،نامہ نگار)مسیحا کو کووڈ19 کے مریض کوابتداء  طبی امداد دینا  مہنگی پڑ گئی ۔ریفر کیے مریض کی راستے میں موت پر ڈپٹی میڈیکل  سپرنٹنڈنٹ  ڈسٹرکٹ  ہیڈ  کوارٹر  ہسپتال وہاڑی پر مشتعل (بقیہ نمبر28صفحہ6پر)

مسلح  لواحقین نے  حملہ  کردیا۔تشدد،لوٹ ماراور  کلینک کو آگ لگانے کی کوشش کی گئی۔دوروز بعد ایف آئی آرتھانہ  کرمپور  سرکل میلسی میں درج کر لی گئی۔تفصیل کے مطابق  کوٹ سورو کے80سالہ مریض  احمد علی کو دو روزقبل کووڈ 19 ہونے پرنواحی قصبے کرم پور کے   الفرید ہسپتال کر م پور میں  ڈاکٹر اورڈپٹی ایم ایس  ڈی ایچ کیوہسپتال بوہاڑی  محمد امین  کھرل کے نجی ہسپتال لایا گیا لواحقین منظور وغیرہ کے اصرار پر ڈاکٹر نے ابتداء طبی امداد دے کر  کووڈ 19 کے مبینہ مریض کوڈی ایچ کیو ہسپتال وہاڑی کے کرونا وارڈ میں  ریفر کیا جس کی راہ میں موت ہوء تو مشتعل لواحقین نے لوٹ کر ڈاکٹر پر تشدد کیا۔ڈیوٹی کارڈ   شناختی کارڈ۔کاغذات اور 4500 نقدی سمیت پرس چھین کر ڈاکٹر محمد امین خان سکنہ 67 کے بی کی کلینک کے دراز سے گن پوائنٹ پر 35 ہزار 60  روپے  لوٹے  گاڑی کلٹس نمبر ایل ای اے۔18۔8537کی سکرین۔بونٹ۔بمپر توڑ کر  ڈیڑھ  لاکھ روپے کا نقصان کیا کلینک کو آگ لگانے کی دھمکی پر ڈاکٹر نے بھاگ کر جان بچاء۔ملزمان کے جانے پر متاثرہ ڈاکٹر کی رپورٹ کے باوجود  مقدمہ درج نہ ہوا جس پر متاثرہ کے ہمراہ  پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن  ضلع وہاڑی کے صدر ڈاکٹر فیضان کمال اور  ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن  ضلع وہاڑی کے  صدر ڈاکٹرط محسن ممتاز نے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر  وہاڑی امیر عبداللہ خان نیازی سے ان کے آفس ملاقات کرنے  کی کوشش کی مگر وہ کسی  خاص  مسئلے پر فیلڈ میں تھے جس پر دونوِ ں رہنماں نے احتجاجی   پریس کانفرنس  کرتے ہوئیڈاکٹر پر تشدد کے مقدمے کے فوری اندراج کی پریس کانفرنس کی  تو گن پوائنٹ پر ڈاکٹر کو یر غمال بنا کر زدو کوب کرنے والے مبینہ مسلح ملزمان  منظور احمد۔اللہ رکھا۔محمد جمیل۔محمد وسیم اور 15 نامعلوم مسلح ساتھیوں کے خلاف  نجی کلینک پرحملہ کر کے  دہشت پیدا کرنے کے الزامات پر کر م پور پولیس نے تیسرے روز مقدمہ نمبر 352/21 زیر دفعات 327،380 ت پ درج کیا ملزمان کے  تاحال  گرفتار نہ ہونے پر  پی ایم اے اور واء ڈی اے وہاڑی کے رہنماں نے اعلی حکام سے فوری قانونی کاررواء اور تحفظ کا وزیر اعلی پنجاب سے مطالبہ کردیا اور کہا کہ ایک ڈاکٹر پر حملہ پوری ڈاکٹر برادری پر حملہ ہے #

کلینک

مزید :

ملتان صفحہ آخر -