جنوبی افریقہ میں پاکستانیوں کی حفاظت کیلئے اقدامات کیے جائیں، فیاض خان

جنوبی افریقہ میں پاکستانیوں کی حفاظت کیلئے اقدامات کیے جائیں، فیاض خان
جنوبی افریقہ میں پاکستانیوں کی حفاظت کیلئے اقدامات کیے جائیں، فیاض خان

  



جوہانسبرگ(بیورو رپورٹ) ہمارا اولین کام جنوبی افریقہ میں مقیم پاکستانیوں کے مسائل حل کرنا ہے،جس طرح سے جنوبی افریقہ کی حکومت نے ہمیں اپنی سوسائٹی میں دل سے قبول کیا اور ہمیں ایک اچھے بزنس کیلئے پلیٹ فارم مہیا کیا وہ قابل تعریف ہے،ان خیالات کا اظہار پاکستان جنوبی افریقہ ایسوسی ایشن کے چئیرمین فیاض خان طور خیلی نے بیورو چیس’’پاکستان‘‘ ندیم شبیر سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ اب حکومت پاکستان کو بھی چاہئیے کہ وہ سنجیدگی سے جنوبی افریقہ میں مقیم پاکستانیوں کی طرف توجہ مبذول کرے کیونکہ موجودہ حالات میں ہمیں اپنی حکومت کی سپورٹ کی اشد ضرورت ہے،حکومت پاکستان کو جنوبی افریقہ کی حکومت سے سفارتی تعلقات مزید مضبوط کرنے چاہئیے اور اسی طرح جنوبی افریقہ کو بھی بہتری کی جانب اقدامات کرنے چاہئیے،پریٹوریا لوڈیم میں قتل ہونے والے پاکستانی راشد کے قتل کی شدید مذمت کرتے ہیں اس سے پہلے بھی جو انفرادی طور پر یا ناگہانی طور پر پاکستانیوں کی اموات واقع ہوئی ہیں اس میں ہماری گورنمنٹ نے کچھ نہیں کیا قتل ہونے والے کیسوں پر اعلیٰ سطح پر کوئی اقدامات نہیں کیے گئے،ہم حکومت کی ایسی بے رخی پر احتجاج کریں گے تو اس میں بھی ہماری حکومت کی ساؤتھ افریقہ میں ساکھ بری طرح سے متاثر ہوگی حکومت پاکستان کو ساؤتھ افریقہ میں مقیم لاکھوں پاکستانیوں کیساتھ بے رخی کا سلسلہ بند کرنا ہو گاکیونکہ ہم لوگ ہر سال کروڑوں ڈالر کا قیمتی سرمایا اہنے ملک بھیج کر پاکستان کی ترقی میں اپنا حصہ ڈالتے ہیں اور اپنی خاندانوں کو سپورٹ کرتے ہیں ۔ان کی جانوں کی حفاظت کو یقینی بنایا جائے۔آج کل ساؤتھ افریقہ میں فارنر کو پیش آنیوالی مشکلات اور ان کو جنوبی افریقہ سے نکالے جانے کے بارے میں انہوں نے کہا کہ ساؤتھ افریقن حکومت فارنرز کو یہاں سے نکال کر اپنے ملک کی معیشت تباہ نہیں کر سکتی لیکن کچھ جوگ ہیں جو فارنر زسے حسد کرتے ہیں ۔

انہوں نے جنوبی افریقہ میں مقیم پاکستانیوں سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ایسے حالات میں ایک دوسرے کا ساتھ دیں۔

مزید : عالمی منظر