میو ہسپتال کی 150سال پرانی دو بڑی عمارتیں گرانے کا حکم

میو ہسپتال کی 150سال پرانی دو بڑی عمارتیں گرانے کا حکم

  



لاہور( جنرل رپورٹر) میو ہسپتال کی 150سو سالہ دو بڑی عمارتوں نارتھ میڈیکل وارڈ اور جبڑا وارڈ کو خطرناک قرارد دے دیا گیا اور انہیں گرا کر دوبارہ تعمیر کرنے کی منظوری سیکریٹری صحت جواد رفیق ملک نے دی ہے۔ان دونوں عمارتوں کی تعمیر کا تخمینہ 20 کروڑ روپے لگایا گیا ہے جو کہ میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر امجد شہزاد مخیر حضرات سے حاصل کرنے میں کامیاب ہو گئے ہیں ان میں سے 140میلین نارتھ میڈیکل وارڈ جبکہ 5کروڑ روپے جبڑا وارڈ پر لگیں گے۔۔ڈیڑھ سو سال پرانی عمارت کے آرکیٹیکلچرل ڈیزائن کا خیال رکھا جائے گا ۔ اس تاریخی عمارت کی تعمیر پر لاگت کا تخمینہ 140 ملین روپے لگایا گیا ہے جو ایک مخیر ادارہ تجمل فاؤنڈیشن فراہم کرے گا۔ اس بات کی منظوری گزشتہ روز میو ہسپتال سٹیئرنگ کمیٹی کے اجلاس میں دی گئی جس کی صدارت سیکرٹری صحت پنجاب جواد رفیق ملک نے کی ۔ اجلاس میں ایم ایس ڈاکٹر امجد شہزاد کے علاوہ چیف آرکیٹیکٹ پنجاب ، چیف انجینئر بلڈنگز (نارتھ زون) سپرنٹنڈنگ انجینئر ، پراونشل بلڈنگز سرکل ون ، ایکسئین انجینئرنگ سیل میو ہسپتال اور کمشنر لاہور کے نمائندے اور پروفیسر سید اویس نے شرکت کی ۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ نارتھ میڈیکل وارڈ کی عمارت مخدوش ہونے کی وجہ سے پہلے ہی خالی کرالی گئی ہے ۔ عمارت بوسیدہ ہونے کی وجہ سے خطرناک ہو گئی تھی اور مریضوں کو عارضی طو رپر دیگر وارڈز میں منتقل کر دیا گیا تھا ۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ تجمل فاؤنڈیشن جس کے بانی میاں تجمل حسین ہیں ، نے مذکورہ تاریخی عمارت دوبارہ تعمیر کرنے کی پیشکش کی تھی جو سٹیئرنگ کمیٹی نے منظور کر لی ہے ۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ عمارت کا آرکیٹکچرل ڈیزائن سرکاری طور پر متعلقہ ادارے کریں گے جبکہ تعمیراتی معیار کو یقینی بنانے کے لئے تھرڈ پارٹی مانیٹرنگ نیسپاک سے کرائی جائے گی ۔ عمارت ٹرن کی (Turn key) بنیاد پر تعمیر کی جائے گی ۔ ڈاکٹر امجد شہزاد نے بتایا کہ نئی تاریخی عمارت کی تعمیر نو کرتے وقت اس کے تاریخی پس منظر اور ڈیزائن کا خیال رکھا جائے گا ۔ انہوں نے بتایا کہ نارتھ میڈیکل وارڈ کی تعمیر کے بعد 120 بستروں کی مزید گنجائش نکل آئے گی ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...