واپڈا کی مجوزہ نجکاری کیخلاف ورکرز یونین نے ملک بھر میں یوم احتجاج منایا

واپڈا کی مجوزہ نجکاری کیخلاف ورکرز یونین نے ملک بھر میں یوم احتجاج منایا

  



لاہور( خبرنگار) محکمہ بجلی واپڈا کے ایک لاکھ پچاس ہزار کارکنوں نے ملک بھر میں عوام کی بنیادی ضرورت بجلی کی لوڈشیڈنگ ، مہنگی بجلی کے خاتمہ اور ورلڈ بینک کے دباؤ پر محکمہ بجلی کو سیٹھوں کے حوالے کرنے کی بجائے اس کی کارکردگی کو بہتر کرنے کے لئے اصلاحات کے نفاذ کے حق میں آل پاکستان واپڈا ہائیڈروالیکٹرک ورکرز یونین کے زیراہتمام ملک کے تمام اہم شہروں میں احتجاجی جلسے،جلوس نکال کر" یوم احتجاج "منایا لاہور میں محکمہ بجلی اور واپڈا کے ہزاروں کارکنوں نے لاہور پریس کلب کے باہر زبردست احتجاجی ریلی منعقد کی اور اْن کے ہمراہ دیگر مزدور تنظیموں کے نمائندگان بمعہ ریلوے، بینکس، ٹیلی کمیونیکیشن، انجینئرنگ، ٹرانسپورٹ شامل تھے بعدازاں ریلی نے لاہور پریس کلب سے وزیراعلی ہاؤس قائداعظم روڈ کے سامنے خورشیداحمد جنرل سیکرٹری کی قیادت میں مظاہرہ کیا۔ کارکنوں نے بجلی کی لوڈشیڈنگ کا جلد خاتمہ اور بجلی سستی کرنے اور اس کی مجوزہ نج کاری نہ کرنے، محکمہ بجلی کی کمپنیوں کا کنٹرول نجی ارکان بورڈ آف ڈائریکٹرز کے اختیار میں رکھنے کی بجائے اس میں انتظامی اصلاحات کرکے اس کی کارکردگی میں اضافہ کے لئے حکومت سے مطالبہ کیا ۔ اس موقع پر احتجاجی جلوس میں آل پاکستان ورکرز کنفیڈریشن کی صدر روبینہ جمیل صدر، اکبر علی خان، چوہدری محمد انور صدر ریلوے ورکرز یونین،حسن محمد رانا جنرل سیکرٹری پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن ایمپلائز یونین، اْسامہ طارق، خوشی محمدکھوکھر بمعہ یونین نمائندگان رانا عبدالشکور، مظفر متین، حاجی محمد یونس، ساجدکاظمی، رانا محمد اکرم، چوہدری مقصود ، چوہدری محمد جاوید اور دیگر نمائندگان یونین شامل تھے اس موقعہ پر آئی اے رحمان جنرل سیکرٹری انسانی حقوق کمیشن آف پاکستان نے خطاب کرتے ہوئے محنت کشوں کی جدوجہد کی بھرپور حمایت کی اور حکومت سے مطالبہ کیا کہ بجلی کی مجوزہ نج کاری کو پارلیمنٹ و سینٹ کے سامنے زیر بحث لائے، ہزاروں کارکنوں نے وزیراعلی ہاؤس کے باہر اپنے مطالبات کے حق میں کئی گھنٹے دھرنا دیا بعدمیں مزدور راہنماء خورشیداحمد نے خطاب کرتے ہوئے و زیراعظم کو یاد دلایا کہ بجلی عوام کی بنیادی ضرورت ہے جسے مہیا کرنا ریاست کی بنیادی ذمہ داری ہ ے ۔ یوم احتجاج

مزید : علاقائی


loading...