ایم ڈی سوئی گیس کی تعیناتی کیخلاف درخواست ، وفاقی حکومت کو دوبارہ نوٹس

ایم ڈی سوئی گیس کی تعیناتی کیخلاف درخواست ، وفاقی حکومت کو دوبارہ نوٹس

  



 لاہور (نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے ایم ڈی سوئی گیس عارف حمید کی تعیناتی کے خلاف درخواست پر وفاقی حکومت کو دوبارہ نوٹس جاری کرتے ہوئے 12مئی تک تفصیلی جواب طلب کر لیا ۔مسٹر جسٹس فرخ عرفان خان نے شہری عابد نذیر سیال اور محکمہ سوئی گیس ایمپلائز یونین کے صدر زاہد خان کی درخواستوں پر سماعت کی، درخواست گزاروں کے وکلاء نے موقف اختیار کیا کہ ایم ڈی سوئی ناردرن گیس عارف حمید کو میرٹ کی خلاف ورزی کرتے ہوئے تعینات کیا گیا ہے اور اکتوبر 2014ء سے وزیر اعظم کے حکم پر عارف حمید کی مدت ملازمت میں غیر قانونی طور پر توسیع بھی کی گئی ہے ، ایم ڈی سوئی گیس کو مس مینجمنٹ اور کرپشن کی بنا پر 2013میں نوکری سے برخاست بھی کیا جا چکا ہے تا ہم ان کو دوبارہ بحال کردیا گیا اور وزیر اعظم کے نوٹیفیکیشن کے مطابق ان کی ملازمت میں توسیع بھی کی گئی ہے ، ڈپٹی اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ سوئی ناردرن گیس پائپ لائنز پرائیویٹ لمیٹیڈ کمپنی ہونے کی وجہ سے وفاقی حکومت کا جواب داخل کروانا لازمی نہیں ہے، عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد پرنسپل سیکرٹری برائے وزیر اعظم اور سیکرٹری پیٹرولیم کو دوبارہ نوٹس جاری کرتے ہوئے 12مئی تک جواب طلب کر لیا ہے ، عدالت نے ریمارکس دیئے کہ اگر وفاقی حکومت نے آئندہ سماعت تک جواب داخل نہ کروایا تو متعلقہ سیکرٹری کو طلب کیا جائے گا۔ نوٹس

مزید : صفحہ آخر


loading...