زائددودھ کی خاطر بھینسوں کو ٹیکے لگانے کیخلاف درخواست کی سماعت

زائددودھ کی خاطر بھینسوں کو ٹیکے لگانے کیخلاف درخواست کی سماعت

  



لاہور (نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے بھینسوں میں دودھ کی مقدار میں اضافے کے لئے مضرصحت ٹیکے استعمال کرنے کے خلاف دائر درخواست پر وفاقی حکومت اور پنجاب حکومت سے تحریری جواب طلب کر لیا۔ جسٹس عائشہ اے ملک نے شہری سرفراز احمد کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کے وکیل آصف محمود چیمہ نے موقف اختیار کیا کہ محکمہ صحت کے افسران کی ملی بھگت سے دودھ کے حصول کے لئے بھینسوں کو لگائے جانے والے ٹیکے سرعام فروخت کئے جا رہے ہیں۔ترقی یافتہ ممالک میں ان ٹیکوں کا استعمال ممنوع ہے۔ٹیکوں کے ذریعے حاصل ہونے والے دودھ کو پینے سے کم عمر بچیوں کے وقت سے پہلے بالغ ہونے کے شرح میں اضافہ ہو رہا ہے جبکہ اس دودھ کے استعمال سے شہری کینسر اور دیگر موذی امراض میں بھی مبتلا ہو رہے ہیں ، انہوں نے مزید موقف اختیار کیا کہ ان ٹیکوں کے استعمال سے بھینسوں کی عمر کم ہو جاتی ہے اور بھینسوں کی مزید افزائش پر بھی اثر پڑتا ہے ، انہوں نے استدعا کی کہ بھینسوں میں دودھ کی مقدار میں اضافے کیلئے مضرصحت ٹیکے استعمال کرنے پابندی عائد کی جائے، ابتدائی سماعت کے بعد عدالت نے وفاقی اور صوبائی حکومت سمیت دیگر فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 8مئی کو تحریری جواب طلب کر لیاہے۔ سماعت

مزید : صفحہ آخر


loading...