اماراتی وزیر کا بیان دھمکی نہیں اظہار ناراضی تھا،شجاعت حسین

اماراتی وزیر کا بیان دھمکی نہیں اظہار ناراضی تھا،شجاعت حسین

  



 لاہور( جنرل رپورٹر)مسلم لیگ کے صدر چودھری شجاعت حسین نے کہا ہے کہ متحدہ عرب امارات کے وزیرمملکت برائے امور خارجہ کے بیان پر وزیرداخلہ چودھری نثار علی خان کو ردعمل دینے میں جلدبازی کا مظاہرہ نہیں کرنا چاہئے تھا، انہوں نے جس غیر محتاط لب و لہجہ اور زبان میں ردعمل ظاہر کیا ہے وہ سفارتی آداب کے منافی ہے، اگر متحدہ عرب امارات کے وزیرمملکت کے بیان پر حکومت پاکستان کو کوئی اعتراض تھا تو اس کا جواب وزارتِ خارجہ کی جانب سے آنا چاہئے تھا، متحدہ عرب امارات کے وزیر کے بیان کو دھمکی نہیں اظہار ناراضی ہی سمجھنا چاہئے تھا، سعودی عرب کی طرح متحدہ عرب امارات نے بھی ہر مشکل اور آڑے وقت میں پاکستان کا بھرپور ساتھ دیا ہے۔ چودھری شجاعت حسین نے کہا کہ اس مسئلہ پر پارلیمنٹ میں جو غیر ذمہ دارانہ بحث کرائی گئی اور اس کے بعد جو مبہم قرارداد پاس کی اس سے پوری دنیا میں پاکستان کی جگ ہنسائی ہوئی ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان کے غیر ذمہ دارانہ رویہ سے جو صورتحال پیدا ہوئی ہے اس پر صفائی دینے کیلئے اب شہبازشریف کو سعودی عرب جانا پڑا اور نواز شریف کو یہ کہنا پڑ رہا ہے کہ پارلیمنٹ کی قرارداد کی سپرٹ کو سمجھا ہی نہیں گیا۔ چودھری شجاعت حسین نے کہا کہ سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے حکمران اَن پڑھ نہیں کہ قرارداد کا مطلب نہ سمجھ سکے ہوں۔

مزید : صفحہ اول