بل گیٹس نے پاکستانیوں کو زبردست خوشخبری سنادی

بل گیٹس نے پاکستانیوں کو زبردست خوشخبری سنادی
بل گیٹس نے پاکستانیوں کو زبردست خوشخبری سنادی

  

دوحہ (نیوز ڈیسک) دنیا کے غریب اور پسماندہ ترین ممالک بھی پولیو کے مرض سے نجات پاچکے ہیں لیکن ہماری بدقسمتی دیکھئے کہ پاکستان دنیا کے ان آخری دو ممالک میں شامل ہے کہ جہاں یہ موزی بیماری اب بھی موجود ہے۔حکومت پاکستان کے ساتھ ساتھ کئی غیر ملکی ادارے اور افراد بھی پولیو کے خلاف جنگ میں شامل ہیں، جن میں ایک اہم نام مائیکروسافٹ کے بانی اور دنیا کے امیر ترین شخص بل گیٹس کا بھی ہے، جو اپنی فلاحی تنظیم کے ذریعے پاکستان سے پولیو کے خاتمے کے لئے سرگرم ہیں۔

بل گیٹس نے دوحہ میں منعقد ہونے والی ایک تقریب میں بات کرتے ہوئے یہ اچھی خبر سنائی کہ 2017ءتک پاکستان سے پولیو کا مرض مکمل طور پر ختم ہوجائے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر قسمت نے ساتھ دیا تو اس سے پہلے بھی موزی مرض پاکستان سے ختم ہو سکتا ہے، لیکن 2017 تک یقینا اس کا مکمل خاتمہ ہو جائے گا۔

پاکستان، افغانستان میں 2017ءتک پولیو ختم ہوجائیگا: بل گیٹس

وہ حکومت قطر کی طرف سے ”دی لائیوز اینڈ لائیولی ہڈ فنڈ“ کو دیا جانے والا پانچ کروڑ ڈالر (تقریباً پانچ ارب پاکستانی روپے ) کا عطیہ وصول کرنے کے موقع پر گفتگو کررہے تھے۔ یہ فنڈ بل گیٹس اور ان کی اہلیہ کے فلاحی ادارے ”بل اینڈ ملنڈا گیٹس فاﺅنڈیشن“ اور اسلامی ترقیاتی بینک کے درمیان پارٹنر شپ ہے، جس کا مقصد بیماریوں، خصوصاً پولیو کے خاتمے کے لئے کوشش کرنا ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان اور افغانستان کے علاوہ دنیا کے ہر ملک نے مسلسل کوشش کر کے پولیو کے مرض کو جڑ سے اکھاڑ پھینکا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس