جرمنی میں غیر ملکی تارکین وطن کے لئے جرمن زبان سیکھنا لازمی قرار،ورنہ ’’سیاسی پناہ ‘‘اب نہیں ملے گی

جرمنی میں غیر ملکی تارکین وطن کے لئے جرمن زبان سیکھنا لازمی قرار،ورنہ ...
جرمنی میں غیر ملکی تارکین وطن کے لئے جرمن زبان سیکھنا لازمی قرار،ورنہ ’’سیاسی پناہ ‘‘اب نہیں ملے گی

  

برلن(مانیٹرنگ ڈیسک)جرمنی کی حکومت نے غیر ملکی تارکین وطن کے لئے نئے قوانین پر اتفاق رائے پیدا کرنے کے لئے اتحادی جماعتوں سے مشاورت کا عمل مکمل کر لیا،جرمنی میں اب انہیں لوگو ں کو سیاسی پناہ ملے گی جو نہ صرف جرمن زبان سیکھیں گے ۔ ملازمت تلاش کرنے اور معاشرے میں اپنے آپ کو ڈھالنے کے لئے مناسب اقدامات نہ کرنے والے غیر ملکی تارکین وطن کو دی جانے والی سہولیات بھی کم کر دی جائیں گی ۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق مخلوط حکومت میں شامل کرسچن ڈیموکریٹک یونین اور سوشل ڈیموکریٹک پارٹی کے مابین یہ اتفاق رائے سات گھنٹے کے طویل بحث و مباحثے کے بعد ہوا۔یاد رہے کہ برلن حکومت کئی ماہ سے ان قوانین کو حتمی شکل دینے کی کوششوں میں مصروف تھی ۔ طے پانے والے مجوزہ قوانین کے تحت جرمنی پہنچنے والے پناہ گزینوں کے لیے متعدد تربیتی پروگراموں کا انتظام کیا جائے گا تاہم ان سے فائدہ نہ اٹھانے والوں کی سیاسی پناہ کی درخواست منسوخ بھی کی جا سکتی ہے۔مہاجرین کو جرمن زبان سکھانے کے علاوہ ایسے کورسز بھی کرائے جائیں گے جن کی مدد سے وہ جرمنی کی روزگار کی منڈی میں ملازمت کے اہل ہو سکیں۔ نئے مجوزہ قوانین کے تحت وفاقی فنڈز کی مدد سے پناہ گزینوں کے لیے ملازمت کے تقریبا ایک لاکھ مواقع پیدا کیے جائیں گے۔ مجوزہ قوانین کی کابینہ سے منظوری اگلے مہینے24مئی کو

ممکن ہے۔ چانسلر میرکل کے بقول جو مہاجرین حکام کی جانب سے مہیا کردہ رہائش ترک کریں گے، انہیں نتائج بھگتنا پڑیں گے تاہم یہ واضح نہیں کہ یہ نتائج کیا ہوں گے۔

مزید : بین الاقوامی