صدر مملکت کیجانب سے تیزی سے نفاذ اردو کی تاکید قابل تحسین ہے،ڈاکٹر شریف نظامی

صدر مملکت کیجانب سے تیزی سے نفاذ اردو کی تاکید قابل تحسین ہے،ڈاکٹر شریف نظامی

لاہور(پ ر)اگرچہ 1973کے آئین کی شق (۱)251 کے تحت اردو کو 15 اگست1988 تک مکمل طور پر انگریزی کی جگہ نافذ ہو جانا چا ہیے تھا لیکن افسوس کہ ہمارے حکمرانوں نے اس لحاظ سے آئین کی خلاف ورزی کا سلسلہ سالہا سال تک جاری رکھا ۔البتہ 8 ستمبر 2015کو سپریم کورٹ کے نفاذ اردو کے حق میں فیصلہ کے فوراً بعد صدر مملکت نے بروقت اعلان کیا کہ ایوان صدر کی تمام خط و کتابت قومی زبان میں ہو گی۔تقریب میں اردو میں خطاب کرکے انھوں نے اپنے منصب کی ذمہ داری سے عہدا براہ ہونے کی قابل تقلید مثا ل قائم کی ہے۔اس حوالے سے اب تیزی کے ساتھ کام کیا جائے۔صدر مملکت کی اردو سرپرستی کے ضمن میں یہ کاوشیں قابل تحسین ہیں ۔درحقیقت آپ نے اسطرح کروڑوں عوام کی دلی امنگوں کی ترجمانی کی ہے۔انتظامی سربراہ کی حیثیت سے ہمارے وزیر اعظم کو بھی چاہیے کہ وہ عوامی نمائندگی کا حق ادا کرتے ہوئے قومی زبان کی ترویج کے لیے فوری احکامات جاری کریں ۔ان خیالات کا اظہار قومی زبان تحریک کے مرکزی صدرڈاکٹر شریف نظامی نے صدر ممنون اور عرفان صدیقی کی ملاقات کے بعد اخبارات کو بیان جاری کرتے ہوئے کیا۔

مزید : میٹروپولیٹن 4