بھارتی فوج کی صحرائے تھر میں نئی مشقوں کی تیاریاں

بھارتی فوج کی صحرائے تھر میں نئی مشقوں کی تیاریاں

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی فوج نے صحرائے تھر میں ایسی مشقوں کی تیاری شروع کر دی ہے کہ جن کا واحد مقصد فوجیوں کو پاکستان کے خلاف جنگ اور بالخصوص پاکستان کی سرزمین میں گھس کر کارروائی کرنے کے لیے تیار کرنا ہے۔ اس صورتحال سے پاکستان اور بھارت کے مابین کشیدگی کا نیا خطرہ پیدا ہو گیا ہے۔ بھارتی اخبار ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق بھارتی فوج یہ مشقیں ’’شتروجیت‘‘ کے نام سے تھر کے صحرا میں کرنے جا رہی ہیں، جن میں فوجیوں کو نیوکلیئر، بائیولوجیکل اور کیمیکل جنگی ماحول میں لڑنے کی تربیت دی جائے گی۔ رپورٹ کے مطابق یہ مشقیں متھورا 1کور کی سربراہی میں کی جائیں گی جو بھارت کی 11لاکھ فوج کی تین بنیادی کورز میں سے ایک ہے۔ متھورا1کور کی سربراہی میں کئی دیگر کورز بھی ان مشقوں میں حصہ لے رہی ہیں۔مشقوں میں فوجیوں کو بھاری آرٹلری اور فضائی معاونت کے ساتھ لڑنے کے لیے تیار کیا جائے گا اور ساتھ ہی جنگی طیاروں کے ذریعے فوجیوں کو پاکستان کی سرزمین پر موجود پاکستانی فوجیوں کے عقب میں اتارنے کی مشق بھی کی جائے گی۔ رپورٹ کے مطابق اس طرح 2ہزار سے 3ہزار فوجیوں کو دشمن کی صفوں کے پیچھے اتارا جائے گا تاکہ پیچھے سے وار کر سکیں اور دشمن کو پسپا کر سکیں۔واضح رہے کہ بھارت ممبئی حملوں کے بعد سے پاکستان میں گھس کر حملہ کرنے کی دھمکیاں دیتا آ رہا ہے، مگر آج تک وہ اس کی جرأت نہیں کرسکا۔ ان مشقوں سے بظاہر لگتا ہے کہ بھارت ایسے ہی حملے کی مشق کر رہا ہے۔

مزید : صفحہ اول