پنجاب کا خادم ہوں وزیر اعظم بننے کا شوق نہیں،نواز شریف میرے بھائی اور قائد ہیں :شہباز شریف

پنجاب کا خادم ہوں وزیر اعظم بننے کا شوق نہیں،نواز شریف میرے بھائی اور قائد ...

اسلام آباد(صباح نیوز) وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف نے کہا ہے کہ پاناما لیکس پر تحقیقات میں کوئی مقدس گائے نہیں ہو گی شریف فیملی کے درمیان اختلافات پرانی کہانی ہے، نواز شریف میرے بھائی اور قائد ہیں ہمارے درمیان کوئی اختلاف نہیں پنجاب کا خادم ہوں وزیر اعظم بننے کا شوق نہیں ، حسن اور حسین نواز پاکستان کے رہائشی نہیں ملکی ٹیکس قوانین کا اطلاق نہیں ہوتا ایک نجی ٹی وی انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ بات اب پاناما لیکس تک نہیں رہنی چاہیے جہاں جہاں پاکستانیوں کی آف شور کمپنیز ہیں ان کی تحقیقات ہونی چاہیے جوڈیشل کمیشن آزاد بنایا جائے کمیشن سے متعلق پوری قوم ایک پیج پر کھڑی ہے کمیشن پیسے میں کرپشن اور ٹیکس چوری کی بھی تحقیقات کرے گا کمیشن صرف پاناما لیکس کی تحقیقات نہیں کرے گا ملک میں ڈاکہ زنی کی بھی تحقیقات ہو گی پاناما لیکس پر اب کوئی مقدس گائے نہیں ہو گی حسن نواز اور حسین نواز انکوائری کمیشن کے سامنے پیش ہونے کے پابند ہیں پاناما لیکس میں حسن اور حسین کے علاوہ 200نام ہیں کمیشن میں دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہونا چاہیے انصاف سب کے لیے ہونا چاہیے میاں شہباز شریف نے کہا کہ اللہ کو جوابدہ ہوں حکومت کا حساب قوم کو دینا ہے مشرف اور پیپلز پارٹی ایک دھیلے کی کرپشن ثابت نہ کر سکے انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نواز شریف کے بچے خود مختار ہیں دونوں بھائی باہر کاروبار کرتے ہیں حسین، حسن نواز یہاں نہیں رہتے تو ٹیکس سسٹم بھی نہیں لگتا حسین نوا ز اور حسن نواز بیگناہی ثابت کریں گے انہوں نے کہا کہ دھرنوں ورنوں پر نہ آئیں ورنہ بات دور تک جائے گی دھرنوں نے ملکی ترقی و معیشت کا بھرکس نکال دیا دورہ لندن پلان پر سوچنے کا وقت نہیں اور بہت کام ہیں ملک کے خلاف اب سازش ہوئی تو قوم ناکام بنا دے گی وزیر اعلی نے کہا کہ شریف خاندان میں اختلافات والی افواہیں پرانی ہیں نواز شریف میرے بھائی اور قائد ہیں ہمارے درمیان کوئی اختلاف نہیں پنجاب کا خادم ہوں وزیر اعظم بننے کا شوق نہیں انہوں نے کہا کہ آپریشن ضرب عضب آئین میں توسیع اور قوم ایک پیج پر ہیں ضرب عضب میں پاک فوج کو بہت اہم کامیابیاں ملیں دہشتگردی کے خلاف آخری حد تک جائیں گے دہشتگردوں اور عسکری عناصر کا صفایا کرنا فوج اور سول حکومت کا فرض منصبی ہے ضرب عضب میں فوج کو بے پناہ کامیابیاں حاصل ہوئی ہیں شہباز شریف نے کہا کہ اورنج لائن منصوبے پر تنقید دم توڑ چکی ہے یہ میرا نہیں عوام کا منصوبہ ہے جس میں ہر کوئی سفر کرے گا اسکی افادیت پر کوئی رائے نہیں ہے عوام کو اس سہولت سے محروم کرنے والوں کو عوام کا ریلا بہا کر لے جائے گایہ چائنہ کا گفٹ ہے اورنج ٹرین بنی تو اس پر خود بھی سفر کروں گا اس منصوبے پر 147ارب لاگت آئے گی۔

لاہور(جنرل رپورٹر) وزیراعلیٰ شہباز شریف کی زیرصدارت اعلیٰ سطح کا اجلاس منعقد ہوا جس میں سرکاری سکولو ں میں معیاری تعلیم کے فروغ کیلئے مختلف تجاویز کا جائزہ لیا گیا۔ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انفارمیشن ٹیکنالوجی کے ذریعے معیاری تعلیم کے حصول کا خواب پورا کیا جا سکتا ہے۔ انفارمیشن ٹیکنالوجی کے ذریعے معیاری تعلیم کو فروغ دینا وقت کی ضرورت ہے اور اس مقصد کیلئے تمام ضروری اقدامات اٹھائے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ معیاری تعلیم ہر بچے کا حق ہے اور یہ حق ہر صورت دیں گے۔معیاری تعلیم کے فروغ کیلئے وسائل کی پہلے کمی تھی نہ آئندہ آنے دیں گے۔ بچوں کو معیاری تعلیم کی فراہمی ڈیجیٹل اقدامات سے جڑی ہوئی ہے اور اس حوالے سے اساتذہ کی تربیت پر خصوصی توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ معیاری تعلیم کے اہداف کے حصول کیلئے موثر مانیٹرنگ کا میکانزم ضروری ہے۔پاکستانی نژاد امریکی ماہر اسد جمال نے معیاری تعلیم کے فروغ کیلئے ڈیجیٹل اقدامات کے حوالے سے بریفنگ دی۔ دوسری طرف وزیر اعلیٰ سے لاہور بار ایسوسی ایشن کے صدر ارشد جہانگیر جھوجہ کی سربراہی میں وفدنے ملاقات کی۔وزیراعلیٰ نے وکلاء کے وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ عوام کو سستے اورفوری انصاف کی فراہمی کیلئے وکلاء برادری کا کلیدی کردار ہے ۔ وکلاء برادری نے ملک میں آزاد عدلیہ کی بحالی اورجمہوریت کے استحکام کیلئے بے مثال قربانیاں دی ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان ہم سب کاہے،اسے آگے لے کر جانے کیلئے سب نے مل کر کام کرنا ہے ۔ قانون او رآئین کی حکمرانی اور جمہوریت کے استحکام کیلئے وکلاء برادری کا کردار شاندار ہے۔انہوں نے کہا کہ آزاد عدلیہ کی بحالی کیلئے وکلاء برادری کی قربانیاں ہمیشہ یاد رکھی جائیں گی۔

مزید : صفحہ اول