سندھ اسمبلی : باردانہ نہ ملنے کے خلاف فنکشنل لیگ کا احتجاج

سندھ اسمبلی : باردانہ نہ ملنے کے خلاف فنکشنل لیگ کا احتجاج

  

کراچی ( اسٹاف رپورٹر ) سندھ میں کاشت کاروں کو باردانہ نہ ملنے کے خلاف جمعہ کو پاکستان مسلم لیگ (فنکشنل) کے ارکان سندھ اسمبلی نے اپنے بازؤں سیاہ پٹیاں باندھیں ۔ مسلم لیگ (فنکشنل) کے پارلیمانی لیڈر نندکمار نے سندھ اسمبلی کے اجلاس میں نکتہ اعتراض پر کہا کہ باردانہ کی بروقت تقسیم کے لیے سندھ اسمبلی نے قرار داد منظور کی تھی لیکن اس قرار داد کا فائدہ ہونے کی بجائے نقصان ہوا ۔ آباد گاروں کو باردانہ نہیں مل رہا ہے ۔ صرف کاروباری لوگوں اور مند پسند افراد کو باردانہ دیا جا رہا ہے اور بااثر لوگوں کی اوطاق پر یہ باردانہ تقسیم کیا جاتا ہے ۔ وزیر خوراک سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ میں نے بعض شکایات پر کچھ افسروں کو معطل کر دیا ہے ۔ شکایات یہ تھیں کہ باردانہ آبادگاروں کی بجائے تاجروں کو دیا جا رہا ہے ۔ ہم نے ان تاجروں کو تحقیقات مکمل ہونے تک ادائیگیاں بھی روک دی ہیں ۔ میں سندھ کے مختلف اضلاع کا خود دورہ کروں گا ۔ پیپلز پارٹی کے رکن سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ آبادگار 15 ، 20 دن رک جائیں ۔ گندم کی قیمتیں بڑھ جائیں گی ۔ اس کے بعد باردانہ کا مسئلہ بھی ختم ہو جائے گا ۔ میں نے گندم روک لی ہے اور فروخت نہیں کی ہے ۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -