میاں چنوں میں کسان اتحاد کابھوک ہڑتالی کیمپ دس روز سے جاری

میاں چنوں میں کسان اتحاد کابھوک ہڑتالی کیمپ دس روز سے جاری

  

میاں چنوں(نمائندہ پاکستان) میاں چنوں ٹی چوک میں پاکستان کسان اتحاد کا مطالبات کے حق میں دس رو زسے بھوک ہڑتال دھر ناجاری ہے جبکہ پاسکو حکام کی جانب سے کسانوں کے مطالبات کو پورے کرنے کی یقین دھانی کروائی گئی اور معاہدہ کو تحریری شکل دے دی،تحریر طورپر لکھے گئے معاہدے میاں چنوں کے سینٹروں سے گندم BIU کے ذریعے جلد اُٹھائی جائیگی،تمام مقامی سینٹروں پر خریداری یقینی ہوگئی(بقیہ نمبر37صفحہ12پر )

،کسانوں کو کہیں اور گندم سپلائی نہیں کرنا پڑے گی،تحصیل میاں چنوں میں زیادہ سے زیادہ باردانہ صرف کاشتکار حضرات کو دیا جائے گا،باردانہ کے حصول کا طریقہ آسان ہوگا،مقامی کمیٹی ذریعے ریکارڈ کے مطابق دیا جائے ،تمام سینٹروں پر کسان اتحاد کے نمائندے موجود ہونگے،کسی مجبوری کے تحت باردانہ خونی رشتہ دارکو ٹرانسفر کیا جا سکے گا،پاکستان کسان اتحاد مرکزی ترجمان میں سجاد نازش اور مہر شوکت سنپال نے کہاکہ پُر امن احتجاج اور مخلص کارکنان کی سخت محنت سے علاقہ کے لوگ بڑی پریشانی سے محفوظ ہوگئے ہیں اب کسانوں کو چیچہ وطنی یر دیگر دور دراز کے علاقوں میں گندم کو فروخت نہیں کرنا پڑے گا، پاسکوحکام سے کسانوں کے مطالبات پورے کرلئے لیکن ابھی واپڈا کے ظلم کیخلاف دھرنا جاری رہے گا،واپڈا کی ہٹ دھرمی یہ کہ تین ماہ سے بند ٹیوب ویلوں کے بل بھی لاکھوں روپے بھیجے جا رہے ہیں،اب مکمل توجہ واپڈا کی اووربلنگ ڈیفٹراماؤنٹ اور ناجائز جرمانے نکالنے سمیت کرپٹ افسران کی علاقہ بدری اور سزا تک جاری رہے گی،واپڈا کی جانب سے کسانوں پر جھوٹے مقدمات جلد خار ج ہونے چاہیں۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -