ایجرٹن روڈ پر لڑکی نے ہوٹل کی چھت سے چھلانگ لگا کر خود کشی کر لی

ایجرٹن روڈ پر لڑکی نے ہوٹل کی چھت سے چھلانگ لگا کر خود کشی کر لی
ایجرٹن روڈ پر لڑکی نے ہوٹل کی چھت سے چھلانگ لگا کر خود کشی کر لی

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک ) ایجرٹن روڈ پر لڑکی نے ہوٹل کی چھت سے چھلانگ لگا کر زندگی کا خاتمہ کر لیا ۔

دنیا نیوز کے مطابق ایجرٹن روڈ پر ہوٹل میں مقیم لڑکی نےکھڑکی سے چھلانگ لگا دی جس کے نتیجے میں وہ شدید زخمی ہو گئی اور اسے تشویشنا ک حالت میں ہسپتال منتقل کیا گیا تاہم وہ جانبر نہ ہو سکی ۔ 16سالہ لڑکی سدرہ اپنے والدین کے ساتھ ہوٹل میں مقیم تھی تاہم آج والدہین ے جھگڑے کے بعددلبرداشتہ ہو کرکھڑکی سے  چھلانگ لگا دی ۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

پولیس کا کہنا ہے کہ لڑکی ہوسپٹیلٹی ان ہوٹل میں مقیم تھی اور واقعے کے بعد ہوٹل انتظامیہ نے اسے تشویشناک حالت میں میو ہسپتال منتقل کیا   مگر وہ جابنر نہ ہو سکی۔پولیس کا مزید کہنا ہے کہ لڑکی اپنی فیملی کیساتھ کل سے ہوٹل میں مقیم تھی اور آج صبح سیر پر جانے کیلئے ہوٹل سے روانگی کےوقت لڑکی کا اپنے والدین سے کسی بات پر جھگڑا ہو جس کے بعد اس نے خود کشی کی . پولیس کا مزید کہنا ہے کہ لڑکی کا والد طارق پیشے لے لحاط سے ڈاکٹر ہے جوفارماسوٹیکل کمپنی کی طرف سے تین روز کیلئے ٹور پر اپنی فیملی کے ہمراہ لاہور آیا تھا  اور اس نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ لڑکی نے خودکشی نہیں کی بلکہ وہ  کھیلتے ہوئے چھت سے گری ہے ۔ پولیس نے بتایا کہ لڑکی کے والد نے اپنے بیان میں  جھگڑے کی خبروں کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ہوٹل کی چورتھی منزل میں رہائش پزیر تھے تاہم لڑکی ہوٹل کی چھٹی منزل پر کھیل رہی تھی اور اچانگ گر کر ہلاک ہو گئی ۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں۔

مزید :

لاہور -