غیر ملکی مداخلت اور غیراعلانیہ جنگوں سے لاتعلق نہیں رہ سکتے:صدرممنون

غیر ملکی مداخلت اور غیراعلانیہ جنگوں سے لاتعلق نہیں رہ سکتے:صدرممنون
غیر ملکی مداخلت اور غیراعلانیہ جنگوں سے لاتعلق نہیں رہ سکتے:صدرممنون

  

ایبٹ آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)صدرمملکت ممنون حسین کا کہناتھا کہ وطن عزیز مختلف اندرونی و بیرونی چیلنجز میں گھرا ہوا ہے۔پاکستان میں غیر ملکی مداخلت ،خطے میں ایٹمی ہتھیاروں کی دوڑ اور غیر اعلانیہ جنگوں کا سلسلہ جاری ہے جن سے لاتعلق نہیں رہ سکتے۔

ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے پاکستان ملٹری اکیڈمی کاکول میں 134ویں پاسنگ آﺅٹ پریڈسے خطاب کرتے ہوئے کیا۔تقریب میں پاک فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف بھی موجود تھے اور پروٹو کول کی پاسداری کرتے ہوئے کھڑے رہے۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صدر نے کہاپاکستان ہمسائیہ ملکوں کیساتھ خوشگوار اور دوستانہ تعلقات کا خواہشمند ہے۔اس سلسلے میں ہماری دفاعی صلاحیتیں خطے میں امن اور خوشحالی کی ضامن ہیں لیکن پاکستان کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کیلئے غیر ملکی مداخلت ، خطے میں ایٹمی و روائتی ہتھیاروں کی دوڑ اور غیر اعلانیہ جنگوں کا سلسلہ جاری ہے جس سے ہم لاتعلق نہیں رہ سکتے۔اس لئے آنے والی نسلوں کے تحفظ اور عالمی وعلاقائی امن کیلئے اس رجحان کا خاتمہ چاہتے ہیں۔ہم سمجھتے ہیں کہ خطے میں دیرپا قیام امن کیلئے کشمیر سمیت تمام متنازع مسائل کا حل ضروری ہے کیونکہ اس کی وجہ سے علاقے کا امن داﺅ پر لگا ہوا ہے۔

ہم چاہتے ہیں کہ یہ تمام متنازع مسائل پرامن بقائے باہمی کے جذبے کے تحت مذاکرات کے ذریعے حل کئے جائیں۔انہوں نے کہا مسائل کے پر امن حل کی خواہش کے باوجود خطے کے مخصوص حالات کے پیش نظر ضروری ہے کہ ہم محتاط رہیں اور اپنی دفاعی صلاحیت میں اضافہ کریں۔صدر نے کہا مجھے خوشی ہے کہ افواج پاکستان بدلتے ہوئے عالمی حالات اور ان کے سبب پیدا ہونے والے چیلنجوں سے پوری طرح آگاہ اور ان سے عہدہ برآ ہونے کیلئے مستعدہیں۔اس سلسلے میں حکومت پاکستان افواج پاکستان کی ہرضرورت کو پورا کریگی۔

انہوں نے کہاانتہا پسندوں نے ہمارے افسروں ،جوانوں اور ہزاروں افراد کوشہید کیا۔پاک فوج کے جوانوں نے عظیم جذبے سے دہشتگردی کیخلاف جنگ لڑی۔ریاستی اداروں نے دہشتگردی کے سیلاب کے آگے بند باندھ دیئے۔ملک کیلئے پاک فوج نے جان ہتھیلی پر رکھی ہوئی ہے۔عالمی برادری بھی دہشتگردی کیخلاف پاکستان کی کوششوں کو تسلیم کرتی ہے۔

انہوں نے کہا پاک فوج نے وطن کیلئے بے مثال قربانیاں دی ہیں۔آپ کو اپنی قائدانہ صلاحیت کو مزید آگے بڑھانا ہے۔انہوں نے کہا پاکستان اللہ کی طرف سے بہت بڑی نعمت ہے،وطن عزیز کا دفاع اولین ترجیح ہے۔حکومت اپنی ذمہ داریوں سے غافل نہیں۔ عوام کے مسائل کا حل ریاست کی ذمہ داری ہے اورمشکلات کے باوجود مسائل حل کررہے ہیں۔آخری دہشتگرد کے خاتمے تک آپریشن جاری رہے گا۔

آخر میں انہوں نے پاس آﺅٹ ہونے والے کیڈٹس کو ایک بارپھر مبارکباد دی اور سعودی عرب،بحرین،لیبیا،فلسطین اور افغانستان جیسے دوست ممالک سے تعلق رکھنے والے کیڈٹس کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے اس امید کا اظہارکیا کہ وہ اپنے وطن میں پاکستان کے سفیر کی حیثیت سے محبتو ں کے فروغ کا ذریعہ بنیں گے۔آخر میں صدر کا کہنا تھا کہ ”میرے عزیز کیڈ ٹس!جب آپ درپیش چیلنجوں سے نبردآزما ہونے اور وطن عزیز کا پرچم سربلند کرنے کیلئے میدان میں نکلیں گے تو قوم آپ کی پشت پر کھڑی ہوگی۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -