وینزویلا کے صدر کی بجلی کے بحران پر قابو پانے کیلئے خواتین سے انوکھی درخواست

وینزویلا کے صدر کی بجلی کے بحران پر قابو پانے کیلئے خواتین سے انوکھی درخواست
وینزویلا کے صدر کی بجلی کے بحران پر قابو پانے کیلئے خواتین سے انوکھی درخواست

  

کراکس (مانیٹرنگ ڈیسک) لاطینی امریکی ملک وینزویلا کے شہری تقریباً روزانہ ہی پانی اور بجلی کو ترستے ہیں کیونکہ ملک میں غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ جاری ہے۔ اس صورتحال پر قابو پانے کیلئے اس ملک کے صدر نکولس مادورو نے اپریل کوتعلیمی ادارے اور کاروبار بند کرنے کا اعلان کیا ہے جبکہ منگل کو وینزویلا میں عام تعطیل بھی ہے۔ جون تک ہر جمعے کو بھی چھٹی ہوا کرے گی خاص طور پر سرکاری ادارے بند رہا کریں گے۔ متعدد صنعتی اداروں کو پیداوار میں کمی کے احکامات دے دیئے گئے۔ صدر مادورو نے خواتین سے ایک انوکھی درخواست کی ہے کہ وہ ہیئر ڈرائیر کو صرف خاص مواقع پر ہی استعمال کریں۔جرمن نشریاتی ادارے کے مطابق صدرنے کہا،”انقلابی اقدامات کرنےکا وقت آ گیا ہے۔“ مادورو نے ملک کے بڑے 15 شاپنگ مالز کے خلاف کارروائی کرنے کا بھی عندیہ دیا ہے۔ مادورو کے بقول ان شاپنگ مالز کے مالکان کو پانچ سال قبل کہا گیا تھا کہ وہ جنریٹرز کا انتظام کرتے ہوئے بجلی کی اپنی ضروریات خود پوری کریں۔ ”اس حکم کی خلاف ورزی کرنے پر ان کو سنگین نتائج کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے“۔

مزید : بین الاقوامی